لاہور کنٹونمنٹ بورڈ کی جانب سے پُل بنانے سے روکنے کے خلاف درخواست

لاہور کنٹونمنٹ بورڈ کی جانب سے پُل بنانے سے روکنے کے خلاف درخواست

لاہور(نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے لاہور کنٹونمنٹ بورڈ کی جانب سے پُل بنانے سے روکنے کے خلاف درخواست پر فریقین کے وکلا ء کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کرلیا ۔جسٹس ساجد محمود سیٹھی نے پنجاب سمال انڈسٹریز ہاؤسنگ سوسائٹی کی درخواست پر سماعت کی۔ درخواست گزار کی طرف سے وقار اے شیخ ایڈووکیٹ پیش ہوئے اور موقف اختیار کیا کہ ڈی ایچ اے فیز ٹو اور سوسائٹی کے درمیان سے گزرنے والے نالے پر پل بنانا چاہتے ہیں،مگر کنٹونمنٹ بورڈ نے پل کی تعمہر سے روک دیا اور این او سی لینے کیلئے مجبور کیا جارہا ہے، وکیل نے اعتراض اٹھایا کہ پل کی تعمیر کنٹونمنٹ بورڈ کے این او سی سے مشروط کرنا غیر قانونی ہے۔ وکیل نے دعویٰ کیا کہ اراضی محکمہ انہار کی ملکیت ہے جن سے این او سی لے لیا گیا ہے ،وکیل نے نشاندہی کی کہ پل کی تعمیر کیلئے تمام مٹیریل موقع پر خراب ہو رہا ہے،وکیل نے استدعا کی کہ عدالت پل کی تعمیر کے لئے این او سی لینے کی شرط کالعدم قرار دیتے ہوئے پل کی تعمیر کرنے کا حکم دے، عدالت نے فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کر لیا ہے۔

لاہور کنٹونمنٹ بورڈ

مزید : صفحہ آخر