عمران خان نے قادیانیوں سے تعاون کے بدلہ میں یہ وعدہ کیا تھا کہ ۔ ۔ ۔ ایسا دعویٰ سامنے آگیا کہ ہرپاکستانی حیران پریشان رہ جائے

10 جولائی 2018 (10:33)

سرائے نورنگ(ویب ڈیسک) متحدہ مجلس عمل کے مرکزی صدر مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ عمران خان نے تین ماہ تک اسلام آباد کے ڈی چوک پر قوم کی مائوں اور بیٹیوں کا نچاتے ہوئے ہماری عزتوں کا جنازہ نکال دیا ہے۔ عمران خان نے قادیانیوں سے تعاون کے بدلہ ختمِ نبوت قانون میں تبدیلی کا وعدہ کیا تھا اوروزارت عظمیٰ کا منصب پانے کے لئے قادیانیوں کے ساتھ مل کر ختم نبوت قانون میں ترمیم کی مذموم کوشش کی جس کی تصدیق خود اُن کی پارٹی کے رہنما شفقت محمود نے کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے یہ کام خود نہیں کیا بلکہ عمران خان کے کہنے پر کیا ہے ۔پی ٹی آئی ختم نبوت قانون میں ترمیم کی مجرم ہے وہ یہاں سب تحصیل تجوڑی میں ایک بڑے جلسہ عام سے خطاب کررہے تھے۔ اس موقع پر جے یو آئی کے صوبائی رہنما مولانا اشرف علی ، ضلعی کونسلر مولانا اصغر علی ،این اے 36کے امیدوار شیخ الحدیث مولانا محمد انور،پی کے 92کے امیدوار ملک نور سلیم،مولانا سمیع اللہ مجاہد حا جی عزیز اللہ خان اور مفتی ضیا ء اللہ سمیت دیگر اہم رہنما بھی موجو د تھے۔

مولانا فضل الرحمان نےکہا کہ ایم ایم اے نے ایماندار اور قابل امیدواروں کو ٹکٹ کے لئے چنا ہے عوام کو چاہئے کہ وہ امیدواروں کی ذاتی شخصیت کو نہیں بلکہ کتاب اور پرچم نبوی کو ووٹ دیں وگرنہ خدا نخواستہ اگر ایم ایم اے کے امیدواروں کو شکست ہوئی تو یہ علماء کی نہیں بلکہ اسلام کی شکست تصور کی جائے گی۔ ہمارا مقابلہ ان قوتوں کے ساتھ ہے جو پاکستان میں بے حیائی کو فروغ دینا چا ہتی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان ملک اور اسلام دشمن عناصر کے مذموم ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں اور مغربی تہذیبوں کو پاکستان پر مسلط کرنا چاہتا ہے انہوں نے تین ماہ تک اسلام آباد میں قوم کی مائوں ،بہنوں اور بیٹیوں کو نچا کر ہماری عزتوں کا جنازہ نکال دیا ہے یہ کیسی غیرت ہے کہ عمران خان ہماری عزتیں تار تار کر رہا ہے اس کے باوجود عوام نے اپنے گھروں پر پی ٹی آئی کے جھنڈے لگا رکھے ہیں ۔

مزیدخبریں