نظام عدل میں اصلاحات کیلئے وکلا کی منتیں کیں،کسی نے مدد نہیں کی،چیف جسٹس پاکستان

نظام عدل میں اصلاحات کیلئے وکلا کی منتیں کیں،کسی نے مدد نہیں کی،چیف جسٹس ...
نظام عدل میں اصلاحات کیلئے وکلا کی منتیں کیں،کسی نے مدد نہیں کی،چیف جسٹس پاکستان

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا ہے کہ نظام عدل میں اصلاحات کیلئے وکلاکی منتیں کیں،کسی نے مددنہیں کی، مجھے کہاجاتاہے عدالت میں اونچابولتاہوں،مجھے اتناکام کرناپڑتاہے،جب کام میں نتیجہ نہ نکلے توپھرانسان کارویہ ایسا ہوجاتا ہے۔

چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں بنچ نے نظام عدل میں اصلاحات سے متعلق کیس کی سماعت کی،درخواستگزار نے موقف اختیار کیا کہ جھوٹے گواہوں کے حوالے سے قوانین کی ضرورت ہے،ہماری عزت ادارے سے منسلک ہے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ کچھ چیزیں ایسی ہیں جوقانون بنانے والوں نے کرنی ہیں،ہم نے 30 روزمیں فیصلہ سنانے کاکہا ہے،فریقین نظام عدل میں اصلاحات سے متعلق 10 روزمیں جواب داخل کریں،فریقین کےساتھ مل کر 10روز میں مکمل ڈیٹافراہم کیاجائے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ نظام عدل میں اصلاحات کیلئے وکلاکی منتیں کیں،کسی نے مددنہیں کی،میں نے سپریم کورٹ بارایسوسی ایشن کے صدرسے بھی درخواست کی،مجھے کہاجاتاہے عدالت میں اونچابولتاہوں،مجھے اتناکام کرناپڑتاہے،جب کام میں نتیجہ نہ نکلے توپھرانسان کارویہ ایسا ہوجاتا ہے۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...