منی لانڈرنگ اور اثاثہ جات کیس، حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں مزید 14 روز کی توسیع

منی لانڈرنگ اور اثاثہ جات کیس، حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں مزید 14 روز کی ...
منی لانڈرنگ اور اثاثہ جات کیس، حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں مزید 14 روز کی توسیع

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)احتساب عدالت نے منی لانڈرنگ اور اثاثہ جات کیس میں گرفتار حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں مزید 14 روز کی توسیع کردی اور سماعت 24 جولائی تک ملتوی کردی۔تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں منی لانڈرنگ اور اثاثہ جات کیس کی سماعت ہوئی، نیب نے گرفتار ملزم حمزہ شہباز کو ریمانڈ مکمل ہونے پر عدالت میں پیش کیا،اس موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں ،جوڈیشل کمپلیکس کے اطراف کے راستوں کوخارداریں تاریں لگا کر بند کر دیاگیا،حمزہ شہباز کی جانب سے ان کے وکیل امجد پرویز اورسلمان اسلم بٹ پیش ہوئے،نیب پراسیکیوٹر نے حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں مزید15 روز کی توسیع کرتے ہوئے کہا کہ حمزہ شہباز تفتیش میں تعاون نہیں کررہے،حمزہ شہباز 96 ایچ ماڈل ٹاؤن گھرخریدنے کے ذرائع نہیں بتارہے،نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ حمزہ شہبازتعاون نہیں کررہے کہ رقم کہاں سے آئی،حمزہ شہبازنے جائیدادخریدنے کے ذرائع بھی نہیں بتائے،نیب پراسیکیوٹر کا کہنا ہے کہ حمزہ شہبازنے گوشواروں میں قیمت بھی کم ظاہرکی،وکیل حمزہ شہباز نے کہا کہ 96 ایچ ماڈل ٹاؤن گھرحمزہ شہبازکی والدہ کاہے،حمزہ شہبازکی والدہ ٹیکس اداکرتی ہیں،کیس آمدن سے زائداثاثوں کاہے کرپشن کا نہیں،وکیل حمزہ شہباز نے کہا کہ جب ثبوت نیب کومل چکے توجسمانی ریمانڈکی کیا ضرورت؟اس دوران حمزہ شہباز روسٹرم پر آگئے اور جج احتساب عدالت کو بتایا کہ رقم کہاں سے آئی؟اس کی تمام تفصیلات دے چکاہوں،آپ3 ماہ کاریمانڈدےدیں تاکہ ان کوسکون آجائے،حمزہ شہباز نے کہا کہ سمجھ نہیں آتی نیب کیاچاہتاہے؟مجھ پرکرپشن ثابت ہوجائے توسیاست چھوڑدوں گا،عدالت نے کہا کہ بےشک سیاست چھوڑدیں ہمیں کوئی غرض نہیں،آپ صرف اپنے کیس کی بات کریں،عدالت نے فریقین کے وکلا کے دلائل سننے کے بعد حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں مزید 14 روز کی توسیع کردی اور سماعت 24 جولائی تک ملتوی کردی۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور /اہم خبریں