ہاؤسنگ کا شعبہ ترجیحات میں سرفہرست ہے، ڈاکٹرامجد علی

ہاؤسنگ کا شعبہ ترجیحات میں سرفہرست ہے، ڈاکٹرامجد علی

  

پشاو (سٹی رپورٹر)وزیر ہاوسنگ خیبرپختونخوا ڈاکٹر امجد علی نے کہا ہے کہ ہاوسنگ کا شعبہ موجودہ حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے، صوبے میں جاری مختلف ہاوسنگ سکیمز پر کام کی رفتار کو تیز کیا جائے۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہارمحکمہ ہاوسنگ کے ماہانہ جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، جائزہ اجلاس میں سیکرٹری ہاوسنگ داؤد خان نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں محکمہ ہاوسنگ کے مختلف پراجیکٹس کے حوالے سے بریفنگ دی گئی، اجلاس کو بتایا گیا کہ حیات آباد ہائی رائز فلیٹس پر 78 فیصد تعمیراتی کام مکمل ہوچکا ہے، بلاک اے اور بی پر تعمیراتی کام رواں ماہ تک مکمل کرلیاجائیگا، جس کی کمپیوٹرائزڈ بلٹنگ بھی رواں ماہ کی جائیگی، جبکہ کورٹ کیسز کے باعث جرمہ ہاوسنگ سکیم کوہاٹ پر تاحال تعمیراتی کام شروع نہ ہوسکا۔ اجلاس میں صوبے کے مختلف اضلاع میں سٹیلائیٹ ٹاونز کے حوالے سے بھی بریفنگ دی گئی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ سٹیلائیٹ ٹاونز کے لئے پی سی ٹو منظور ہوچکا ہے اور سٹیلائیٹ ٹاونز کے لئے کوہاٹ، بنوں، پشاور، ایبٹ آباد، سوات، مردان، ڈی آئی خان، لکی مروت، ٹانک، ملاکنڈ اور ضلع خیبر میں اراضی کی نشاندہی کے لئے سروے کا کام بہت جلد شروع کردیا جائیگا۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ جلوزئی ہاوسنگ سکیم پر 70 فیصد تعمیراتی کام مکمل کیا جاچکا ہے، تاہم کورونا وباء کے باعث منصوبے میں پلاٹس مالکان کو قبضہ دینے کا عمل تاخیر کا شکار ہوچکا ہے، پلاٹس کا قبضہ اب دسمبر میں دیا جائیگا۔ اسی طرح سی پیک سٹی کے لئے 80 ہزار کنال اراضی حاصل کرنے کے بعد اس کا قبضہ ایف ڈبلیو او کو دے دیا گیا ہے۔ وزیر ہاوسنگ ڈاکٹر امجد علی کا کہنا تھا کہ حیات آباد ہائی رائز فلیٹس میں تیار ہونے والے فلیٹس کی بلیٹنگ 20 جولائی تک یقینی بنایا جائے۔ انہوں نے جرمہ ہاوسنگ سکیم کوہاٹ پر بھی فوری طور پر کام شروع کرنے کی ہدایت کی اور کہا کہ ہاوسنگ سکیم کے بڑے حصے پر قانونی پیجدگیاں موجود نہیں، اس لئے منصوبے پر کام کا باقاعدہ آغاز کیا جائے۔ وزیر ہاوسنگ نے سوات اور باجوڑ سمیت مختلف اضلاع میں سٹئیلائیٹ ٹاونز کے لئے جگہوں کی نشاندہی کرانے کی ہدایت کی۔ انہوں نے محکمہ ہاوسنگ کے حکام کو جلوزئی ہاوسنگ سکیم میں پلاٹس کا قبضہ دسمبر تک یقینی بنانے کی ہدایت کی۔ صوبائی وزیر نے سی پیک سٹی میں غیر قانونی کان کنی کا بھی نوٹس لیا اور کہا کہ اس عمل کو فوری طور پر بند کرکے ملوث افراد کے خلاف کاروائی کی جائے۔ ڈاکٹر امجد علی کا کہنا تھا کہ ہنگو ماڈل ٹاون اور سول کوارٹر فلیٹس پر کام کی رفتار کو تیز کیا جائے۔ انہوں نے ڈنگرام ہاوسنگ سکیم سوات اور اس کیساتھ میڈیا کالونی کی فزیبلیٹی رپورٹ بھی ایک ماہ کے اندر مکمل کرنے کی ہدایت کی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -