جے آئی ٹی رپورٹس کا معاملہ عدالت میں جانا چاہیے، ڈاکٹر فہمیدہ مرزا

  جے آئی ٹی رپورٹس کا معاملہ عدالت میں جانا چاہیے، ڈاکٹر فہمیدہ مرزا

  

اسلام آباد(آن لائن) وفاقی وزیربین الصوبائی رابطہ ڈاکٹر فہمیدہ مرزا نے کہا ہے کہ جے آئی ٹی رپورٹس کا معاملہ عدالت میں جانا چاہیے تاکہ اصل جے آئی ٹی رپورٹ سامنے آسکے۔ ذوالفقار مرزا نے 2011میں استعفیٰ دے دیا تھا بہت سے قتل اس کے بعد ہوئے۔ فریال تالپور سے عزیر بلوچ کو بیرون ملک فرار کرانے کا سوال ہونا چاہیے۔ دوسروں کا نام استعمال کر کے چند لوگ ایوان صدر پہنچ گئے۔ مختلف جماعتیں جرائم پیشہ افراد کو استعمال کرتی رہی ہیں۔ جمعرات کے روز نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے فہمیدہ مرزا نے کہا کہ میں خاموش تھی لیکن میری خاموشی سے کچھ لوگوں کو تکلیف ہو رہی تھی وہ چاہتے ہیں کہ میں بولوں۔ پہلے یہ فیصلہ کر لیں کہ ذوالفقار مرزا پر کس جے آئی ٹی کی بنیاد پر الزام لگا رہے ہیں۔ علی زیدی جے آئی ٹی رپورٹ لائے ہیں اس پر بھی دستخط موجود ہیں۔ میں چاہتی ہوں کہ ڈاکٹر ذوالفقار مرزا پر الزامات لگانے والے عدالت جائیں تاکہ اصل جے آئی ٹی رپورٹ سامنے آئے۔

فہمیدہ مرزا

مزید :

صفحہ آخر -