شہریوں کو انصاف کی بروقت فراہمی اولین ترجیح، آئی جی شعیب دستگیر

شہریوں کو انصاف کی بروقت فراہمی اولین ترجیح، آئی جی شعیب دستگیر

  

 لاہور(کرائم رپورٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب شعیب دستگیر نے کہا ہے کہ قانون کی یکساں عملداری کو یقینی بناتے ہوئے شہریوں کو انصاف کی فی الفور اور باآسانی فراہمی میری اولین ترجیح اور مشن ہے جسکے حصول کیلئے پوری فورس کو اپنے فرائض بھرپور محنت، لگن اورخلوص نیت سے ادا کرنا ہونگے کیونکہ مظلوم شہریوں کے دست و بازو بن کر ہی ہم اپنی دنیا و آخرت سنوار سکتے ہیں۔ انہوں نے مزیدکہاکہ صوبے کے تمام ریجن اور اضلاع میں تفتیشی افسران کو کاسٹ آف انویسٹی گیشن فراہم کردی گئی ہے اب اگر کسی تفتیشی افسر نے مظلوم شہریوں اور مدعیان مقدمہ سے کاسٹ آف انویسٹی گیشن کا تقاضہ کیا تو اسے محکمہ میں رہنے کاکوئی حق نہیں اور اسکے خلاف زیرو ٹالرینس کے تحت محکمانہ اور قانونی کاروائی کو یقینی بنایاجائے گا۔انہوں نے مزیدکہا کہ جنوبی پنجاب کی عوام کو انصاف کی فوری فراہمی کیلئے ایڈیشنل آئی جی ساؤتھ پنجاب آفس کو مکمل فعال کرکے اختیارات اور وسائل بھی فراہم کئے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایڈیشنل آئی جی پولیس ساؤتھ پنجاب کو پولیس کی سروس ڈیلوری اور کمپلینٹ مینجمنٹ سسٹم کو مزیدکارآمد کرنے کا ٹاسک بھی دیا ہے تاکہ صحیح معنوں میں پولیس کے نئے سسٹم کے ثمرات عام آدمی تک پہنچیں۔آئی جی پنجاب شعیب دستگیر نے کہا کہ اس خطے کے عوام کے دیرینہ مطالبے کے پیش نظر تبدیلی تفتیش کے تیسرے درجے کا اختیار بھی ایڈیشنل آئی جی ساؤتھ پنجاب کو دینے کیلئے قانونی پیچیدگیوں کو دور کیا جارہا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ملتان،ڈی جی خان اور بہاولپور کے پولیس اہلکاروں کی مختلف سزاؤں اور سروس معاملات کی اپیلوں کی سماعت بھی ایڈیشنل آئی جی ساؤتھ پنجاب کرینگے۔

انہوں نے مزیدکہاکہ شہریوں کو پولیس سے انصاف کے سوا کچھ نہیں چاہئیے لہذا سینئر افسران اس بات کو یقینی بنائیں کہ تھانوں میں آنے والے شہریوں کے ساتھ اچھا برتاؤ کیا جائے اور پوری توجہ کے ساتھ انکے مسائل سنے جائیں اور بغیر کسی دباؤ اور سفارش کے اسے حل کرنے کیلئے صدق دل سے کوششیں کی جائے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز ملتان کے دورہ کے موقع پرپولیس لائن میں ملازمین کیلئے منعقدہ دربار سے خطاب اور مختلف پولیس منصوبوں کا افتتاح کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر انکے ہمراہ ایڈیشنل انسپکٹر جنرل پولیس ساؤتھ پنجاب انعام غنی اور ریجنل پولیس آفیسر وسیم احمد خان بھی تھے۔پولیس دربار میں سی پی او ملتان حسن رضا خان،ڈی پی او وہاڑی احسان اللہ چوہان،ڈی پی او خانیوال علی وسیم اور ڈی پی او لودھراں سید کرار حسین سمیت پولیس افسران نے بھی شرکت کی۔آئی جی پنجاب شعیب دستگیر ملتان پہنچے تو آر پی او آفس میں پولیس کے چاک و چوبند دستے نے انکو سلامی پیش کی۔اس موقع پر آئی جی پنجاب نے آر پی او آفس کے نئے کانفرنس روم کا افتتاح بھی کیا۔بعد ازاں آئی جی پنجاب پولیس ٹریننگ کالج پہنچے اور زیر تربیت اہلکاروں کیلئے نئے لگائے گئے جدید روٹی پلانٹ اور نئے کلاس رومز کا افتتاح بھی کیا۔انسپکٹر جنرل پنجاب پولیس شعیب دستگیر نے پولیس دربار سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ مظلوم کو انصاف کی فوری فراہمی کیلئے عدالتوں کی معاونت کی جائے اور کیسز کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے کیونکہ مظلوم کے ساتھ زیادتی کا حساب دین و دنیا دونوں میں دینا پڑے گا۔شعیب دستگیر نے کہا کہ تھانے کی سطح پر تفتیش کا شفاف میکنزم متعارف کرایا جارہا ہے اس سلسلے میں فیلڈ فورس کو مکمل سہولیات فراہم کرینگے اس حوالے سے حکومت اڑھائی ارب کی گاڑیاں پولیس کو فراہم کررہی ہے تاہم عوام اور حکومت پولیس سے مزید بہتر کارکردگی کی امید رکھتے ہیں۔شعیب دستگیر کا کہنا تھا کہ انہوں نے اپنی تعیناتی کے دوران ترقی کے کیسز پر فوری کام کیا اور عرصہ دراز سے ترقی کے منتظر پولیس ملازمین کو میرٹ پر ترقیاں دی گئیں۔آئی جی پنجاب نے کہا کہ کرونا کے دوران 10 کروڑ روپے کا راشن دیہاڑی دار اور غریب عوام کو پولیس نے اپنے وسائل سے تقسیم کیا۔اسی انداز میں فورس کا ہر جوان اپنے محکمے کا سفیر بن کر عوام کی خدمت کرے تو محکمہ کی عزت کے ساتھ آپکی عزت میں بھی اضافہ ہوگا۔آئی جی پنجاب کا کہنا تھا کہ عوام کیلئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والے شہداء پولیس کو سلام پیش کرتے ہیں۔کرونا کے دوران بھی جرائم کے خلاف پولیس سیسہ پلائی دیوار ثابت ہوئی۔آئی جی پنجاب نے اس موقع پر ایس پی اور ایس ڈی پی اوز کو تنبیہ کی کہ وہ اپنا سپروائیزری کردار اسکی اصل روح کے مطابق ادا کریں تاکہ انکے ماتحت پولیس سسٹم درست انداز میں کام کرسکے۔اس موقع پر ایڈیشنل آئی جی پولیس ساؤتھ پنجاب انعام غنی نے کہا کہ آئی جی پنجاب کا عوام دوست وڑن آگے لیکر چلیں گے اور جنوبی پنجاب میں پولیس انفراسٹرکچر کی بہتری کیلئے اقدامات کئے جائیں گے انعام غنی کا کہنا تھا کہ پولیس افسران کی میرٹ پر تقرریوں سے فورس کا مورال بلند کرینگے۔قبل ازیں ریجنل پولیس آفیسر وسیم احمد خان نے سپاسنامہ پیش کیا اور ملتان ریجن کی جانب سے آئی جی پنجاب کو بھرپور تعاون کا یقین دلایا۔دریں اثناء آئی جی پنجاب نے ملتان آمد کے موقع پر آر پی او آفس میں ریجن کے افسران سے کرائم میٹنگ بھی کی اور آر پی او آفس کے لان میں پودا بھی لگایا۔آئی جی پنجاب سے اس موقع پر کمشنر شان الحق اور ڈپٹی کمشنر عامر خٹک نے بھی ملاقات کی۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے آئی جی پنجاب شعیب دستگیر نے کہا کہ عوام کے جان و مال کا تحفظ پولیس کی بنیادی ذمہ داری ہے۔جنوبی پنجاب میں جرائم کے خاتمے کیلئے بہترین ٹیم تعینات کی ہے اب امیدوں پر پورا اترنے کا وقت ہے۔پولیس کمانڈ محکمے کے مثبت امیج کو اجاگر کرنے کیلئے مثالی اصلاحات پر عمل پیرا ہے اس مقصد کے حصول کیلئے پولیس افسران جانفشانی سے عوام کو انکی دہلیز پر انصاف کی فراہمی کے لیے اقدامات کریں۔قبل ازیں آئی جی پنجاب شعیب دستگیر نے تھانہ جلیل آباد کا دورہ کیا اور تھانہ جلیل آباد کی نئی عمارت کا افتتاح کیا۔آر پی او وسیم احمد خان اور سی پی او حسن رضا بھی افتتاحی تقریب میں شریک ہوئے۔شعیگ دستگیر نے تھانے کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ روایتی پولیس کلچر کے خاتمے کیلئے تھانوں کو اپ گریڈ کیا جارہا ہے۔تھانوں میں آنے والی عوام کے مسائل کے حل کیلئے فوری اقدامات کئے جائیں۔آئی جی نے کہا کہ تفتیش کے معیار کو بہتر بنانے کیلئے جدید ٹیکنالوجی اور وسائل بروئے کار لائے جائیں۔شعیب دستگیر نے ہدایت کی کہ تھانوں کی حوالات اور بخشی خانوں میں ملزمان کیلئے موسم کی شدت کے پیشِ نظر حفظان صحت کا خیال رکھا جائے۔اس موقع پر ریجنل پولیس آفیسر وسیم احمد خان نے پیشہ ورانہ امور کے حوالے سے بریفنگ بھی دی۔

مزید :

علاقائی -