کینسر نہیں کرونا، نشتر انتظامیہ کاورثا کو ڈیڈ باڈی دینے سے انکار

  کینسر نہیں کرونا، نشتر انتظامیہ کاورثا کو ڈیڈ باڈی دینے سے انکار

  

ملتان( وقائع نگار) نیوکچہری کے رہائشی محمد ارشد کی اہلیہ جو کہ کینسر کی مریضہ تھی اور عرصہ ایک سال سے مینار نشتر میں زیر علاج تھی جو رات کو وفات پاگئیں اجبکہ نشتر والوں نے کرونا ڈال دیا اور ڈیڈ باڈی دینے سے انکار کردیا جس پر اہل علاقہ ریاض احمد،حق نواز،محمد اشرف،رب نواز،محمد فیاض،اشفاق احمد،مدثراحمد،محمد حفیظ،عبدالجبار،محمد بلال،رحمان،ذیشان و(بقیہ نمبر40صفحہ7پر)

دیگر نے نشترہسپتال کے ڈاکٹرزاور انتظامیہ کے خلاف ہسپتال کے باہر سڑک بند کرکے احتجاجی مظاہرہ کیا۔مظاہرین نے اعلی حکام وزیراعظم عمران خان،صدر پاکستان،چیف جسٹس پاکستان،آرمی چیف،وزیراعلی عثمان بزدار،وزیر صحت یاسمین راشداور ایم ایس نشتر ہسپتال ملتان سے اپیل ہے کہ کوئی بھی مریض ہواور اس مریض کی نشتر میں فوت ہوجائے تو نشتر والے اس پر کورونا ڈال دیتے ہیں میری اہلیہ کینسرکی مریضہ تھی اس پر کورونا ڈال دیا۔ہم نے لاکھوں روپیہ مریضہ پر لگا دیاالٹا دینے کی اب نشتر ہسپتال والیہم سے ڈیڈ باڈی دینے کے5لاکھ روپے مانگ رہے ہیں۔ہم مزدور لوگ ہیں ہم 5لاکھ روپے کہا سے لائیں ہمارے ساتھ انصاف کیا جائے اوری ڈیڈ باڈی ہمارے حوالے کی جائے تاکہ ہم اس کے کفن دفن کا انتظام کریں اور مرحومہ کی نماز جنازہ ادا کر سکیں۔

مینار نشتر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -