پہلے معصوم بچے کا گلا دبا کر قتل کیا پھر اس خوفناک منظر سے سہمی لڑکی کا ریپ کرکے اسے کنویں میں پھینک دیا، جنسی بے راہ روی کی دردناک داستان

پہلے معصوم بچے کا گلا دبا کر قتل کیا پھر اس خوفناک منظر سے سہمی لڑکی کا ریپ ...
پہلے معصوم بچے کا گلا دبا کر قتل کیا پھر اس خوفناک منظر سے سہمی لڑکی کا ریپ کرکے اسے کنویں میں پھینک دیا، جنسی بے راہ روی کی دردناک داستان

  

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن) جنسی بے راہ روی، تشدد اور بربریت کی شرمناک داستان سامنے آگئی۔ بھارت میں سترہ سالہ لڑکے نےمعصوم بچی کے سامنے اس کے کزن کو قتل کیا اور پھر اس  منظر سے سہمی بچی کاریپ کرکے اسے کنویں میں پھینک دیا۔

بھارتی اخبار ٹائمز آف انڈیا کے مطابق یہ ہولناک واقعہ بھارتی ریاست چھتیس گڑھ میں پیش آیا ہے جہاں ایک لڑکے نے کھیتوں میں کھیلتے دو بچوں کو  جو آپس میں کزن تھے  عبادت کے لیے استعمال ہونے والے پتے توڑنے کے لیے قریبی جنگل میں لے گیا اور وہاں بچی کے سامنے ہی اس  کے چھ سالہ کزن کا گلا گھونٹ کر اسے قتل کردیا اور لاش جھاڑیوں میں چھپا دی جس کے بعد اس نے خوف سے سہمی لڑکی کو ریپ کا نشانہ بنایا جس کے بعد اسے قریبی کنوویں میں پھینک کر فرار ہوگیا۔ 

تاہم بچی جو کہ خوش قسمتی سے زندہ رہی اور چیختی رہی کی آواز سن کر وہاں سے گزرنے والا ایک شخص رک گیااور اہل علاقہ کی مدد سے بچی کو باہر نکالا۔ بچی کے جسم پر بری طرح چوٹیں آئی ہوئی تھیں۔

پولیس کو بلایا گیاتو بچی نے واقعہ پولیس کو بتادیا اور اس لڑکے کا نام بھی لیا جس کے بعد ملزم کو گرفتار کرلیا گیاہے۔

خیال رہے بھارت میں جنسی بے راہ روی ، زیادتی  اور خواتین خصوصا بچیوں سے ناروا سلوک عام بات ہیں۔ بھارت کو خواتین کے لیے بدترین ممالک میں سے ایک سمجھا جاتا ہے ۔ دنیا کے کئی ممالک اس بھارت کا سفر کرنے کے حوالے سے ایڈوائزریز بھی جاری کرچکے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -