”کورونا کیساتھ ساتھ الزام تراشی کا بھی شکار ہوا“ نووک جوکووچ نے بھی بالآخر دل کا حال سنا دیا

”کورونا کیساتھ ساتھ الزام تراشی کا بھی شکار ہوا“ نووک جوکووچ نے بھی بالآخر ...
”کورونا کیساتھ ساتھ الزام تراشی کا بھی شکار ہوا“ نووک جوکووچ نے بھی بالآخر دل کا حال سنا دیا

  

بلغراد (ڈیلی پاکستان آن لائن) عالمی نمبر ایک ٹینس سٹار نوواک جوکووچ نے کہا ہے کہ میں کورونا وائرس سے متعلق 'الزام تراشی' کا شکار ہوا اور ممکنہ طور پر آئندہ ماہ شیڈول یو ایس اوپن کا بائیکاٹ کروں گا۔

تفصیلات کے مطابق سربیا کے دارالحکومت بلغراد اور کروشیا کے شہر زیڈار میں جون میں ٹینس کے نمائشی میچز کھیلنے کے بعد جوکووچ سمیت چار کھلاڑیوں کے ٹیسٹ مثبت آئے تھے۔ نوواک جوکووچ کے علاوہ گریگور دمتروو، بورنا کورک اور وکٹر ٹروئکی وائرس کا شکار ہو گئے تھے۔

نمائشی میچ کے دوران کھلاڑیوں کی ایک دوسرے سے گلے ملنے، ساتھ باسکٹ بال کھیلنے اور پارٹی کرنے کی تصاویر اور ویڈیوز سامنے آنے کے بعد جوکووچ پر تنقید کی گئی تھی اور ساتھی کھلاڑی نک کرگیوز نے ان کے عمل کو ”غیر ذمہ دارانہ“ قرار دیا تھا۔

جوکووچ نے سربین اخبار سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں نے بعد میں صرف تنقید دیکھی جس میں سے زیادہ تر بغض سے بھری تھی۔ یہ یقینی طور پر صرف تنقید سے زیادہ ہے، یہ ایک ایجنڈا کی طرح ہے اور الزام تراشی جاری ہے۔ میں نے ابھی تک یو ایس اوپن میں کھیلنے کے حوالے سے فیصلہ نہیں کیا ہے، امریکہ اور بالخصوص نیویارک میں کورونا کے کیسز میں اضافہ ایونٹ کے حق میں نہیں ہے۔

واضح رہے کورونا کیسز سامنے آنے کے باعث آزمائشی میچز منسوخ ہونے کے بعد نوواک جوکووچ نے کہا تھا کہ وہ ہر ایک کیس پر بہت معذرت خواہ ہیں تاہم اس کے باوجود انہیں شدید تنقید کا نشانہ بنایا جاتا رہا کہ حتیٰ کہ سربیا کی وزیراعظم کو ان کے دفاع میں بیان دینا پڑا تھا۔

مزید :

کھیل -