توانائی کا سب سے بڑا صارف شعبہ ٹرانسپورٹ ہے

   توانائی کا سب سے بڑا صارف شعبہ ٹرانسپورٹ ہے

  

اسلام آباد (آئی این پی) پاکستان میں توانائی کا سب سے بڑا صارف شعبہ ٹرانسپورٹ کا ہے جس میں توانائی کے موثر استعمال سے قیمتی زر مبادلہ بچایا جا سکتا ہے۔ نیشنل انرجی ایفیشنشی اینڈ کنزرویشن اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل پالیسی منیر احمد نے  ویلتھ پاک کو بتایا کہ پنجاب میں 6 لاکھ ٹریکٹر ہیں جن میں پچاس فیصد توانائی بچانے کے قابل نہیں رہے۔ انہوں نے کہا کہ اِن ٹریکٹروں کا یہ حال ہے کہ ایک منٹ میں ایک کلو میٹر کے برابر ایندھن استعمال کر لیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ایندھن بچانے کیلئے اپنے رویوں میں تبدیلی لانا ہو گی۔ منیر احمد نے کہا کہ ایندھن کی بچت سے ہمیں کم درآمدی بل ادا کرنا ہو گا جس سے ڈالر بچیں گے۔ اوپس کے جنرل منیجر قاسم امام نے ویلتھ پاک کو بتایا کہ ٹرانسپورٹ شعبہ پاکستان جی ڈی پی کا حصہ دس فیصد ہے اور یہ روز گار میں 6 فیصد حصہ ڈالتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گاڑیوں کی ڈیزائن ٹیکنالوجی، ڈھانچہ، فٹنس اور ڈرائیورنگ کی عادتیں توانائی کی بچت میں اہم کردار ادا کرتی ہیں اور گاڑیوں کی توانائی کی بڑھاتی ہیں۔ گاڑیوں کے ایندھن کی کھپت بہتر ڈیزائن ٹیکنالوجی سے کم ہو سکتی ہے۔ ٹرانسپورٹ کے شعبے میں سڑکوں کا معیار بہتر بنا کر بھی ایندھن بچایا جا سکتا ہے۔ اچھی سڑک گاڑی کی مائلج بہتر بنا دیتی ہے۔  انہوں نے کہا کہ کراچی میں ٹریفک جام کی وجہ سے سالانہ 200 ارب روپے کا تیل جل جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گرین ہاؤس گیسوں کے اخراج میں 35 فیصد کا ذمہ دار شعبہ ٹرانسپورٹ ہے اِسی طرح سالانہ مجموعی حادثات اور نقصانات میں یہ جی ڈی پی کا 3 فیصد ذمہ دار ہے۔ انہوں نے تجویز دی کہ حکومت ڈیزل بسوں کے بجائے الیکٹرک بسوں کو فروغ دے تاکہ ایندھن کی بچت کی جا سکے۔

مزید :

کامرس -