ٹوبہ ٹیک سندھ،مدرسہ کی جگہ کے تنازع پر فائرنگ،عالم دین سمیت2افراد قتل

  ٹوبہ ٹیک سندھ،مدرسہ کی جگہ کے تنازع پر فائرنگ،عالم دین سمیت2افراد قتل

  

       ٹوبہ ٹیک سنگھ(نمائندہ خصوصی) مدرسہ کو وقف شدہ جگہ واپس لینے اور راستہ کے تنازع پر جھگڑے کے دوران فائرنگ کے نتیجہ میں معروف عالم دین مولانا غلام مصطفی حیدری سمیت 2افرادقتل، پولیس کے مطابق نواحی چک نمبر 323ج ب ترانڈی میں مدرسہ جامعہ سراج القرآن کے مہتمم مولانا غلام مصطفی حیدری گزشتہ شام اپنے مدرسہ کے باہر موجود تھے کہ اس دوران گاؤں کے رہائشی ملزم شفیق ولد بشیر احمدآرائیں نے فائرنگ کردی جس کے نتیجہ میں مولانا غلام مصطفی حیدری جبکہ راہگیر27سالہ جابر ولد مشتاق بھٹی گولیاں لگنے سے شدید زخمی ہو گئے۔دونوں زخمیوں کو ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں جابر زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا  جبکہ مولانا غلام مصطفی حیدری کو تشویشناک حالت کے پیش نظر الائیڈ ہسپتال فیصل آبادمنتقل کیا جارہا تھا کہ وہ بھی شدید زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے راستہ میں ہی دم توڑ گئے۔وقوعہ کی اطلاع ملتے ہی ڈی ایس پی صدر آصف علی شاہ،ایس ایچ او تھانہ سٹی انسپکٹر فریاد حسین چیمہ پولیس نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے اور ملزم کو موقع سے گرفتار کرلیا۔

دوافراد قتل

مزید :

کراچی صفحہ آخر -