امریکی خاتون اول پر تنقید، سابق جرنیل کو مشیر کے عہدے سے ہٹادیا گیا

امریکی خاتون اول پر تنقید، سابق جرنیل کو مشیر کے عہدے سے ہٹادیا گیا
امریکی خاتون اول پر تنقید، سابق جرنیل کو مشیر کے عہدے سے ہٹادیا گیا
سورس: Instagram

  

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) امریکہ میں ایک تھری سٹار جنرل کو ایکٹو ڈیوٹی آفیسرز کے مشیر کے عہدے سے ہٹادیا گیا ہے جس کی تصدیق امریکی فوج کے ترجمان نے کی ہے۔  جنرل گیری وولیسکی پر الزام ہے کہ انہوں نے اپنے سوشل میڈیا پر امریکی خاتونِ اول جل بائیڈن پر تنقید کی تھی۔

خبر ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق امریکی فوج کے ریٹائرڈ لیفٹیننٹ جنرل گیری وولیسکی ایچ کیو ای ایس ایم کے عہدے پر کام کر رہے تھے جو کہ ایک انتہائی کوالیفائڈ ایکسپرٹ سینئر مشیر کا عہدہ تھا، تاہم انہیں کمبائنڈ آرمز سنٹر کے کمانڈنگ جنرل لیفٹیننٹ جنرل تھیوڈور مارٹن نے ان کے عہدے سے ہٹادیا ۔  

امریکی فوج کی ترجمان سنتھیا او سمتھ نے اپنے بیان میں جنرل (ر) گیری کو عہدے سے ہٹانے کی کوئی وجہ نہیں بتائی اور کہا ہے کہ ان کے حوالے سے انکوائری ہو رہی ہے جس کی رپورٹ آنا باقی ہے۔ دوسری جانب یو ایس اے ٹوڈے کا کہنا  ہے کہ جنرل گیری وولیسکی کے نام سے چلنے والے ایک ٹوئٹر اکاؤنٹ سے امریکی خاتون اول پر ذاتی نوعیت کی تنقید کی گئی تھی تاہم بعد میں یہ ٹویٹ ڈیلیٹ کردیا گیا تھا۔

مزید :

بین الاقوامی -