عدت کیس کا اصل مقصد بانی پی ٹی آئی کو اندر رکھنا ہے: تحریک انصاف

عدت کیس کا اصل مقصد بانی پی ٹی آئی کو اندر رکھنا ہے: تحریک انصاف

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                                                                                    لاہور (نامہ نگار خصوصی) انسداد دہشت گردی عدالت کے جج خالد ارشد نے علیمہ خان، عظمی خان، عمر ایوب، اسد عمر، فواد چوہدری و دیگر ان کی عبوری ضمانتوں میں 24 جولائی تک توسیع کر دی،عدالت نے ریکارڈ نہ پیش کرنے پر تفتیشی افسران کو شوکاز نوٹس جاری کر دیا اور حکم دیا کہ آئندہ سماعت پر ریکارڈ طلب کرلیا  علیمہ خان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم عدالت میں ضمانتوں کے لیے آرہے مگر تفتیشی افسر پیش نہیں ہو رہا، عدالت میں کہا گیا کہ تفتیشی افسر کل کیس میں محنت کر رہا تھا اس لیے ابھی سو رہا ہے،ہم نے عدالت سے استدعا کی کہ تفتیشی افسر کے لیے کوئی سزا مقرر کریں،بانی پی ٹی آئی کے حوالے سے انھوں نے کہا کہ عدت کیس کوئی کیس نہیں ہے اصل مقصد  بانی پی ٹی آئی کو اندر رکھنا ہے،عمر ایوب کا کہنا تھا کہ فارم 47 کی یہ حکومت بلیڈ سے خود اپنی شہ رگ کاٹے گی، اتنی نادان احکومت آج تک نہیں دیکھی، یہ بجٹ پاکستان کی عوام کیخلاف اقتصادی دہشت گردی ہے، شہباز شریف نے خود کہہ دیا کہ یہ بجٹ آئی ایم ایف نے بنایا ہے، بجلی کا یونٹ اگلے کچھ دنوں میں سو روپے سے اوپر جائے گا،فواد چوہدری نے کہا کہ بانی پی ٹی آئی کو ملٹری کے حوالے کرنے کا پی ٹی آئی قائدین کو شوق ہے، اگر بانی پی ٹی آئی کے بھوک ہڑتال کا اعلان کیا ہے تو یہ مزاحمت کی علامت ہے، پاکستان کا سیاسی نظام اس وقت فارم 47 پر کھڑا ہے، ججوں کے خلاف مہم چلائی جا رہی ہے بابر اعوان نے کہا کہ جو دوست پی ٹی آئی سے چلے گئے، بانی پی ٹی آئی خود ان کا فیصلہ کریں گے نو مئی کے مقدمات پر ایک اعلی سطح جوڈیشل کمیشن بنایا جائے، بانی پی ٹی آئی کا رستہ روکو گے تو انقلاب اور عوام کی فلاح کا راستہ روکو گے، پی ٹی آئی کی طرف سے کہتا ہوں کہ بانی پی ٹی آئی کا ٹرائل اوپن کیا جائے۔

پی ٹی آئی 

مزید :

صفحہ آخر -