سندھ حکومت نے خزانے پر مزید 29پارلیمانی سیکرٹریز کا بوجھ ڈال دیا

سندھ حکومت نے خزانے پر مزید 29پارلیمانی سیکرٹریز کا بوجھ ڈال دیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                                                                                    کراچی (سٹاف رپورٹر)مالی خسارے کا رونا رونے والی سندھ حکومت نے خزانے پر مزید 29 پارلیمانی سیکرٹریز کا بوجھ ڈال دیا۔سندھ کابینہ میں 18 وزیر، 2 مشیر، 10 معاونین خصوصی، 8 ترجمان اور 29 پارلیمانی سیکٹریز شامل ہوئے ہیں۔ وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے 29 اراکین سندھ اسمبلی کو مختلف محکموں کا پارلیمانی سیکرٹری مقررکردیا ہے۔رکن سندھ اسمبلی ہالار وسان محکمہ خوراک، شام سندرمحکمہ ٹرانسپورٹ، یوسف بلوچ مائنز اینڈ منرل، فرخ احمد شاہ ورکس اینڈ سروسز،عادل انڑپبلک ہیلتھ کے پارلیمانی سیکرٹریز مقرر کیے گئے ہیں۔ اسی طرح خرم سومرو جیل خانہ جات،ملیحہ منظورانفارمیشن،نداکھوڑوہیلتھ بہبودآبادی،سعدیہ جاوید پلاننگ ڈیولپمنٹ، سیما خرم اسکول ایجوکیشن،قاسم سراج سومرولوکل گورنمنٹ کے پارلیمانی سیکرٹری مقرر کیے گئے ہیں۔حنادستگیرکلچرٹورازم،سیدہ ماروی فصیح یونیورسٹیز اینڈ بورڈ،یاسمین شاہ ویمن ڈیولپمنٹ کی پارلیمانی سیکرٹری ہوں گی۔پارلیمانی سیکرٹریز کو ماہانہ 50 ہزار اضافی الاؤنس، ڈرائیور کے ساتھ سرکاری گاڑی، ہاؤس رینٹ، مفت فضائی ٹکٹ ملے گا۔ علاوہ ازیں بیرون ملک سفر کی سہولت، میڈیکل، دفتری الاؤنس سمیت ودیگر سہولیات بھی ملیں گی۔

مزید :

صفحہ اول -