آئی ایس آئی کو فون ٹیپ کی اجازت دینا بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے، پاکستان بار کونسل

آئی ایس آئی کو فون ٹیپ کی اجازت دینا بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے، ...
آئی ایس آئی کو فون ٹیپ کی اجازت دینا بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے، پاکستان بار کونسل

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (ویب ڈیسک) پاکستان بار کونسل کے ممبران نے حکومت کی آئی ایس آئی کو فون ٹیپ کرنے کی اجازت دینے کی مذمت کرتے ہوئے فیصلے کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

"ایکسپریس نیوز" کے مطابق  پاکستان بار کونسل کے ممبر عابد زبیری، شفقت چوہان، اشتیاق خان، شہاب سرکی، منیر احمد کاکڑ اور طاہر عباسی نے مراسلہ ارسال کردیا جس میں حکومت کی جانب سے آئی ایس آئی کو فون ٹیپ کرنے کی اجازت کی سختی سے مذمت کی گئی اور اس اقدام کو خطرناک و غیر منصفانہ قرار دیا گیا ہے۔

مراسلے میں کہا گیا ہے کہ حکومت کی جانب سے ایسا نوٹیفکیشن بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے، ایسا نوٹیفکیشن آزاد عدلیہ اور قانون کی حکمرانی کے اصولوں کو کمزور کرنے کے مترادف ہے، سپریم کورٹ اور اسلام آباد ہائیکورٹ میں فون ٹائپنگ کے کیسز کے زیر سماعت ہونے کے دوران ایسا نوٹیفکیشن پریشان کن ہے۔

بار کونسل کے ممبران نے اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس طارق جہانگیری کے خلاف مہم کی بھی مذمت کرتے ہوئے مہم چلانے والوں کے خلاف سخت ایکشن کا مطالبہ کیا ہے۔