حکومت کے موجودہ طرز عمل سے قیام امن ممکن نہیں ،سینیٹر شاہی سید

حکومت کے موجودہ طرز عمل سے قیام امن ممکن نہیں ،سینیٹر شاہی سید

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے رہنماءسینیٹر شاہی سید نے کراچی ائر پورٹ اور تفتان میں زائرین کی بسوں پر دہشت گردوں کے حملوں اور شمالی وزیر ستان میںخودکش حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کے موجودہ حالات انتہائی تشویش ناک ہیںحکومت کی دہشت گردوں کے متعلق کوئی واضح سمت یا پالیسی نظر نہیں آرہی ہے دھرنوں،ریلیوں ، جلسوں اور احتجاج کے بجائے ملک کی سلامتی کے بارے سوچا جائے موجودہ حالات کے تناظر میں ہمیں اپنے اداروں کے ساتھ کھڑا ہونا پڑے گاکراچی ائر پورٹ پر دہشت گردوں کا مقابلہ کرنے پر اپنے فورسز کے جوانوں خراج تحسین پیش کرتے ہیں تمام واقعات میں شہید ہونے والے افراد کی درجات کی بلندی پسماندگان کے صبر جمیل اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعا گو ہیں۔ موجودہ صوبائی اور مرکزی حکومت جو طرزعمل اختیار کیے ہوئے ہے اس طرح قیام امن کسی طور ممکن نہیں ہے مرکزی اور صوبائی حکومتیں ایک دوسرے کے ساتھ ٹوپی ڈرامہ کھیل کر اپنی اپنی ذمہ داریوں سے راہ فرار اختیار کرنا چاہتی ہیں۔ ایک عرصے کہتا چلا آرہا ہوں کہ کراچی بارود کے دہانے پر کھڑا ہوا ہے ٹارگتڈ آپریشن کو دس ماہ ہوچکے ہیں اس کے باوجود اتنا بڑا سانحہ رونماہو گزشتہ رات کے سانحہ میں شہید بشیر احمد بلور اور میاں افتخار جیسی نڈر لیڈر شپ کی کمی محسوس ہوئی جو واقعے کے بعد جائے وقوع پر پہنچ کر اپنے جوانوں کی حوصلہ افزائی کرسکے اور زخمیوں کی دارسی اور شہداءکے اہل خانہ کی دل جوئی کرے مذاکرات بھی ہوگئے اب حکومت کیا لائحہ اختیار کرے گی ؟بد قسمتی سے موجودہ حکومت کے پاس دہشت گردی سے نمٹنے کے لیے ناعزم ہے اور نا حوصلہ اور نا ہی واضح حکمت عملی،تنقید برائے تنقید کے بجائے حکومت وقت سے دہشت گردی کے خلاف بھر پور اقدامات کا مطالبہ کرتے ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -