دہشت گردی کیخلاف مجلس وحدت مسلمین کاتین روز ہ سوگ کا اعلان

دہشت گردی کیخلاف مجلس وحدت مسلمین کاتین روز ہ سوگ کا اعلان

  

لاہور(سٹا ف رپورٹر) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری سیاسیات سید ناصر عباس شیرازی نے دہشت گردی کے افسوسناک واقعات پر تین روز ہ سوگ اور جنازوں کے بعد ملک بھر میں احتجاجی مظاہروں کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت نے پاکستان کو سکیورٹی رسک سٹیٹ بنا دیا ہے۔ تفتان میں زائرین اور کراچی میں ایئر پورٹ پر حملہ نواز حکومت کی واضح نا اہلی اور دہشت گردوں سے اس کی ہمدردانہ پالیسیوں کا نتیجہ ہے،زائرین کو فول پروف سکیورٹی کی فراہمی صوبائی حکومت کی آئینی و اخلاقی ذمہ داری تھی ۔ہنگامی پریس کانفرنس میںان کا کہنا تھا کہ وفاقی و صوبائی حکومت نے خدشات کے باوجود ایران سے آنے اور ایران جانے والے زائرین کی سکیورٹی کے لئے کوئی جامع حکمت عملی مرتب نہیں کی ۔ سکیورٹی اداروں اور صوبائی حکومت کی غفلت سے قوم ایک مرتبہ پھر اندوہناک سانحہ سے دوچار ہو ئی ہے جبکہ قانون نافذ کرنے والے ادارے بے حسی کا مجسمہ بنے ہوئے ہیں ، جس طرح وزیر ستان میں ایئر اسٹرائک کے نتیجے میں ملک دشمن دہشت گردوں کو واصل جہنم کیا جارہا ہے اسی طرح کوئٹہ تفتان روٹ پر موجود دہشت گردو ں کے ٹھکانوں پر پھر بھی فضائی بمباری کی جائے۔ کراچی ایئرپورٹ اورتفتان بارڈر سانحہ ایک ہی گروپ آف کمپنیز کی کارستانی ہے۔۔ میاں صاحب اپنی ناکامی اور نااہلی کو مدنظر رکھتے ہوئے مستعفی ہوجائیں۔ان کاکہنا تھا کہ ہم آج بھی اپنے واضح اور دو ٹوک موقف پر قائم ہیں کہ آئین ، قانون اور ریاست کے باغیوں اور شہریوں کے قاتلوں کے ساتھ مذاکرات ریاست کو کمزور اور دہشت گردوں کو تقویت بخشنے کے مترادف ہیں ، لہٰذا عوام موجودہ کمزور، ڈرے ہوئے، بزدل حکمرانوں سے تنگ آچکے ہیں ۔

ناصر شیرازی

مزید :

صفحہ آخر -