کراچی ائیر پورٹ پر حملے میں فارن فنڈڈ لوگ ملوث ہیں حکومت تحقیق کرے سیاستدان

کراچی ائیر پورٹ پر حملے میں فارن فنڈڈ لوگ ملوث ہیں حکومت تحقیق کرے سیاستدان

  

                             لاہور( انوسٹی گیشن سیل) کراچی انٹرنیشنل ائیر پورٹ پر حملے میںفارن فنڈڈ لوگ ملوث ہیں حکومت تحقیق کرے کہ کون لوگ پاکستان میں امن کے دشمن ہیں۔قانون نافذ کرنے والے اداروں کی ناکامی کی وجہ سے بھی تشویشناک حادثہ پیش آیا ہے۔ان خیالات کا اظہار ملک کے سیاسی رہنماو¿ںنے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ہے۔ مسلم لیگ(ن)کے رہنما شیخ روحیل اصغر نے کہا کہ سانحہ کراچی ائیر پورٹ میں غیرملکوں ہاتھوں کے ملوث ہونے سے بھی انکار نہیں کیا جا سکتا۔کراچی ائیرپورٹ حملہ ایک تشویشناک واقعہ ہے حکومت کوشش کر رہی ہے جلد ملک میں قیام امن کو یقینی بنایا جائے گا۔جماعت اسلامی کے رہنما فرید پراچہ نے کہا کہ کراچی انٹرنیشنل ائیر پورٹ پر حملہ قانون نافذ کرنے اور حکومت دونوں کی ناکامی ہے دباو¿ کی صورت میں سیکیورٹی پلان تشکیل نہ دینے سے بڑ اسانحہ پیش آیا۔پاکستا ن میں دہشتگردی کے پیچھے امریکہ اور بھارت کا ہاتھ ہے۔تحریک انصاف کے رہنما رائے حسن نواز نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں نے حکومت کو قیام امن کےلئے مینڈیٹ دیا تھا پھرحملہ حکومتی ناکامی ہے۔ملک دشمن قوتوں کی نشاندہی اور خاتمہ وقت کی اہم ضرورت ہے۔پیپلز پارٹی کے رہنما صفدر عباسی نے کہا کہ کراچی حملہ باعث تشویش ہے جس میں دنیا بھر میں پاکستان کو بدنام کیا گیا۔طالبان کی ذمہ داری قبول کرلی ہے حکومت کو مکمل تحقیق کرنی چاہیے کہ کون لوگ پاکستان کا امن تباہ کر رہے ہیں۔سابق گورنر پنجاب لطیف کھوسہ نے کہا کہ کراچی حملہ حکومت کی مجرمانہ غفلت ہے جو دہشتگردوں کو مضبوطی کےلئے قوت دینے کا نتیجہ ہے۔دفاعی نظام کو ناکام بنا کر دہشتگردوںکا ائیر پورٹ پر پہنچنا متعلقہ اداروں کی بھی ناکامی ہے۔فارن فنڈڈ لو گ کاروائیاں کر رہے ہیں اور اگر ایک جہاز کا بھی پر ٹیڑھا ہو جاتا تو پاکستان دنیا سے منقطع ہو سکتا تھا۔

سیاستدان

 

مزید :

صفحہ آخر -