رمضان اور اربوں کی سبسڈی!

رمضان اور اربوں کی سبسڈی!

  



حکومت پنجاب نے ذخیرہ اندوزوں اور منافع خوروں کو مات دینے کے لئے پنجاب کے شہروں میں 316 رمضان بازار لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کے مطابق حکومت رمضان المبارک میں اربوں روپے کی سبسڈی دے گی، جس کے ذریعے ان رمضان بازاروں اور عام مارکیٹ میں اشیاء ضرورت و خوردنی سستی ملیں گی۔ آٹے کا 10کلو کا تھیلا310 روپے میں فروخت ہو گا، جبکہ اس سال گھی اور چینی کے علاوہ مرغی، دالیں اور انڈے بھی سستے داموں فراہم کئے جائیں گے۔وزیراعلیٰ کی طرف سے اس اقدام پر تنقید کی گنجائش نہیں، یہ اچھا فیصلہ ہے کہ اس طریقے سے شاید منافع خوروں کو شکست دی جا سکے، لیکن اس کے لئے ضرور ہے کہ حکومت کی طرف سے یہ ضروری اشیاء سستی مہیا کرنے اور ان کو عوام کی دسترس میں پہنچانے کے لئے جن افراد کو تعینات کیا جائے، وہ بھی خود وزیراعلیٰ کی طرح محنت کریں اور دیانت داری کا ثبوت دیں تاکہ اربوں روپے کی سبسڈی کے ثمرات عوام تک پہنچ سکیں۔یہ اقدام عوام کو ریلیف دینے کے حوالے سے اچھا ہے تاہم یہ مستقل حل تو نہیں، صرف یہی اشیاء تو ضروری نہیں ہیں، ان کے ساتھ اور بھی بہت اشیاء ہیں، پھل بھی سرفہرست ہیں، جبکہ مشروبات کی مانگ بھی بڑھ جاتی ہے، ضرورت اس امر کی ہے کہ مارکیٹ میں کھپت اور آمد کے اعداد و شمار بھی نظر میں رکھے جائیں اور اہتمام کیا جائے کہ کوئی منافع خوری نہ کر سکے۔ اگر چند ایسے سماج دشمنی عناصر کو سرعام سزا مل جائے تو دوسروں کو عبرت ہو سکتی ہے۔ یہ ہم مسلمان ہی کیوں اس جرم کے مرتکب ہوتے ہیں کہ جب بھی کوئی تہوار آئے لوٹ مار شروع کر دیتے ہیں۔ اس سلسلے میں ہمارے خطیب حضرات کو بھی توجہ دینا چاہئے اور احکام الٰہی و سنت نبوی کے مطابق ان حضرات کو خبردار کر کے راہ راست پر آنے کی تلقین کرنا چاہئے۔

مزید : اداریہ


loading...