رنگ روڈ سدرن لوپ فیز 2 زیرالتواء

رنگ روڈ سدرن لوپ فیز 2 زیرالتواء

  



 لاہور (اقبال بھٹی)لاہور رنگ روڈ اتھارٹی کا رنگ روڈ منصوبہ سدرن لوپ فیز ٹو التوا ء کا شکار ہونے لگا،2ماہ پہلے بھیجے گئے پی سی ون کی محکمہ پی اینڈ ڈی اے ابھی تک منظوری نہیں دی،محکمہ پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ کی طرف سے عدم ادائیگی کی وجہ سے رنگ روڈ اتھارٹی زمین مالکان کو 27ارب کی ادائیگی نہ کر سکی۔تفصیلات کیمطابق لاہور رنگ روڈ اتھارٹی نے اپریل میں 27ارب روپے کا پی سی ون پی اینڈڈیپارٹمنٹ کو بھیجا جس کی منظوری ابھی تک نہیں دی گئی۔ذرائع نے بتایا ہے کہ کمشنر لاہو ر جو کہ اتھارٹی کے چئیرپرسن ہیں ان کے ذریعے 27ارب روپے کا پی سی ون سی اینڈ ڈبلیو ڈیپارٹمنٹ کو بھیجا گیا اور سی اینڈ ڈبلیونے منظوری کیلئے فائنل اتھارٹی پی اینڈ ڈی کو ارسال کر دیا جس کو 2ماہ گزر گئے لیکن تاحال کوئی پیش رفت نہ ہو سکی اور زمین زمین مالکان بھی ادائیگیوں سے محروم ہیں ۔27ارب کی یہ رقم زمین مالکان کو ادائیگی اور ری لوکیشنز کیلئے مختص ہے 30کلومیٹر لمبے سدرن لوپ فیز ٹو جو کہ لاہور ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی کے فیز 8سے شروع ہو کر براستہ فیروز پور روڈ سے ڈیفنس روڈ خیابان امین سے مراکہ ملتان روڈ تک ہے اور اس میں دولو خورد ،کاچھہ ، کاہنہ ، ہلوکی ، ججاتے،اٹاری اور موضع کماہاں آتے ہیں ۔بتایا گیا ہے رقم نہ ملنے کیوجہ سے پراجیکٹس تاخیر کا شکار ہو جاتے ہیں اور جس وجہ سے لاگت بھی بڑھ جاتی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...