کسٹمز اہلکاروں کی ملی بھگت سے منی لانڈرنگ اور گولڈ کی سمگلنگ کا انکشاف

کسٹمز اہلکاروں کی ملی بھگت سے منی لانڈرنگ اور گولڈ کی سمگلنگ کا انکشاف

  



لاہور(ارشد محمود گھمن) علامہ اقبال انٹرنیشنل ائیر پورٹ پر کسٹمز اہلکاورں کامنی لانڈرنگ میں ملوث ہونے کا انکشاف کیا گیا ہے۔انٹرنیشنل لاؤنج میں واقع شاپس میں ملازمین کے ذریعے2ہزار سے4ہزار کی غیر ملکی کرنسی او ر کروڑوں روپے مالیت کی گولڈ سمگلنگ کی جاتی ہے۔ جہاں سے کروڑوں روپے اکٹھے ہوجانے پر مسافر کے ذریعے بیرون ملک ڈیپارچر کیے جاتے ہیں ۔با وثوق ذرائع سے معلوم ہو ا ہے کہ علامہ اقبال انٹر نیشنل ائیر پورٹ گزشتہ کئی سالوں سے لاؤنج میں موجود شاپس کے عملہ کے ذریعے محکمہ کسٹمز اہلکاورں کی ملی بھگت سے تمام موجود سٹاف جس میں پرائیویٹ عملہ بھی شامل ہے وہ لاؤنج میں آنے جانے کے بہانے 2سے 4ہزار غیر ملکی کرنسی کے نوٹ جیب میں ڈال کر لے جا کر دکانوں میں محفوظ کر دیتے ہیں اور سونا بسکٹ بھی ایک ایک کر کے جمع کر کے سینکڑوں تولہ سونا جمع کر لیتے ہیں اور بعد ازاں اسے خفیہ طریقے سے بیرون ممالک منتقل کرا دیتے ہیں ۔یاد رہے کہ چند روز قبل بھی ائیر پورٹ لاؤنج کے اندر دکان کے مالک توفیق بٹ کا بھانجا عبدلباسط 16 کلو سونا اور کروڑوں روپے کی غیر ملکی کرنسی بھی اسی طریقہ سے لے جانے لگا جو کہ پکڑ ا گیا۔بعد ازاں محکمہ کسٹمز کی ملی بھگت سے کارروائی ردی کی ٹوکری کی نذر کر دی گئی۔اس حوالے سے کسٹمز ترجمان کا کہنا ہے کہ ائیر پورٹ کے اندر لاؤنج میں مکمل چیکنگ اور دکانوں پر کڑی نظر رکھی جاتی ہے اور مزید تحقیقات بھی کی جائیں گی اور عبدالباسط کی انکوائری مکمل کر کے اس جوڈیشل کیا جا چکا ہے۔

سمگلنگ انکشاف

مزید : صفحہ آخر