’’وصولی میں ناکامی ‘‘ محکمہ ایکسائز پنجاب کا حدف 4ارب روپے کم کردیاگیا

’’وصولی میں ناکامی ‘‘ محکمہ ایکسائز پنجاب کا حدف 4ارب روپے کم کردیاگیا

  



لاہور(انوسٹی گیشن سیل) حکومتی حدف کے حصول میں ناکامی ، پنجاب حکومت نے مالی سال 2014-15 کے لیے ایکسائز اینڈٹیکسیشن ڈیپارٹمنٹ کا حدف 4 ارب روپے کم کردیا۔ وزارت خزانہ نے 24 ارب 21 کروڑ روپے کے ٹارگٹ کو 20ارب47کروڑ روپے تک کم کردیا ہے۔معلوم ہوا ہے کہ ایکسائز اینڈٹیکسیشن پنجاب کو مالی سال 2014-15کے لیے ریونیو ریکوری کا حدف 24ارب 21کروڑ روپے دیا گیا۔لیکن تمام تر کوشش کے باوجود ایکسائز اینڈٹیکسیشن ڈیپارٹمنٹ حدف حاصل نہیں کرسکا۔ اور بالآخر محکمے نے حدف کے حجم کو کم کرنے کے لیے صوبائی وزارت خزانہ سے تحریری طورپر رجو ع کیا اور 24ارب 21کروڑ روپے کے حدف کو کم کرکے 20ارب روپے کرنے کا مطالبہ کیا ۔جس پر فنانس ڈیپارٹمنٹ نے تمام تر حقائق کو مد نظررکھتے ہوئے ایکسائز اینڈٹیکسیشن پنجاب کے مجموعی حدف کو لگ بھگ چار ارب روپے کم کردیا ہے۔ذرائع کے مطابق ایکسائز اینڈٹیکسیشن ڈیپارٹمنٹ کو مالی سال 2014-15کے لیے پراپرٹی ٹیکس کا حدف 8ارب 30کروڑ روپے ، ایکسائز ڈیوٹی کا ہدف ایک ارب 87کروڑ روپے ،موٹر وہیکلز ٹیکس کا حدف 11ارب 83کروڑ روپے ، کاٹن فیس کا حدف 64کروڑ روپے ،پروفیشنل ٹیکس کا حدف 82کروڑ روپے ،تفریحی ٹیکس کا حدف 8کروڑ 40لاکھ روپے ،لگثرری کلبوں سے ایجوکیشن سیسکی وصولی کا حدف دوکروڑ 10لاکھ روپے ،محکمے کو مالی سال 2014-15کے لیے دوکنال اور اسے بڑے لگثرری گھروں سے ٹیکس وصولی کا حدف61کروڑ روپے ۔ امراء کے فارم ہاؤسز پر ریکوری کا حدف ڈیڑ کروڑ روپے دیا گیا۔لیکن ٹوکن ٹیکس کی ادا کرنے والی گاڑیوں کی تعداد میں کمی، پراپرٹی ٹیکس میں اضافے کی شرح کو کم کیئے جانے اور نیلامی کی گاڑیوں کی رجسٹریشن معطل کئے جانے ، لگثرری ٹیکس اور فارم ھاؤس کے ساتھ ساتھ بڑے گھروں سے ٹیکس وصولی میں درپیش عدالتی مسائل کی وجہ سے محکمے کے لیے ریونیو حدف کا حصول ناممکن ہوگیا۔جس پر محکمے نے مجموعی حدف کو کم کرنے کے لیے حکومت سے رجوع کیا۔

ایکسائز کا حدف

مزید : صفحہ آخر


loading...