ایجوکیشن رائونڈ اپ

ایجوکیشن رائونڈ اپ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

امتحانی سنٹروں میں خلا ف ضابطہ تعیناتیاں نہ ہونے پر بوٹی مافیا کا خاتمہ ہو گیا
کنٹرولر امتحانات لاہور بورڈ اظہر منیر نے کہا ہے کہ انٹرمیڈیٹ پارٹ ون اور پارٹ ٹو کے حالیہ امتحانات میں بوٹی مافیا ، نقل کے کلچر اورامتحانی سنٹروں میں خلافِ ضابطہ اوربے قاعدگیوں کے رجحان کے مکمل خاتمے کے لئے گزشتہ امتحانات کی بجائے اس مرتبہ نیا طریقہ کار اپنایا گیا ہے اور امیدواروں کی نسبت سپرنٹنڈنٹس اور ڈپٹی سپرنٹنڈنٹس اور نگران عملے کی تعیناتی اور دوران امتحانات نگران عملے کی بڑی باریک بینی سے مانیٹرنگ کی گئی ہے اور خلاف ضابطہ کارروائیوں یا بے قاعدگیوں میں مرتکب پائے جانے والے 35سے زائد سپرنٹنڈنٹس، ڈپٹی سپرنٹنڈنٹس جبکہ متعدد نگران عملے کے خلاف کارروائی کی گئی ہے ، جس سے نقل اور بوٹی مافیا اور کسی دوسرے کی جگہ امتحانات دینے کی شرح اور رحجان میں 100فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔
لاہور بورڈ کے زیر اہتمام انٹرمیڈیٹ پارٹ ون اور پارٹ ٹو کے حالیہ امتحانات میں 2لاکھ 67ہزار امیدواروں نے شرکت کی جس کے لئے لاہور، شیخوپورہ، ننکانہ اور قصور کے اضلاع میں 491امتحانی سنٹر ز بنائے گئے ہیں، انہوں نے بتایا کہ اس مرتبہ انٹرمیڈیٹ کے امتحانات میں پہلے کی نسبت نیا طریقہ اپنایا گیا ہے ، جس میں امتحانی سنٹروں میں سپرنٹنڈنٹس اور ڈپٹی سپرنٹنڈنٹس سمیت امتحانی عملے کی تعیناتی کیلئے محکمہ تعلیم کے تین الگ الگ شعبوں کے سربراہوں سے رپورٹس حاصل کر کے فلٹریشن کے بعد تعیناتی کی گئی ہے اور دوران امتحانات امیدواروں کی نسبت سپرنٹنڈنٹس، ڈپٹی سپرنٹنڈنٹس اور نگران عملے کی مانیٹرنگ کے لئے انتہائی سخت طریقہ کار اپنایا گیا ہے۔ جس میں امتحانی سنٹروں کی مانیٹرنگ اور چیکنگ کے لئے 260سے زائد سپیشل سکواڈز تشکیل دیئے گئے، جس میں امتحانی عملے کی روزانہ کی بنیاد پر سخت ترین مانیٹرنگ کی گئی، اس میں کسی قسم کی شکایت سامنے آنے پر 35سے زائد سپرنٹنڈنٹس اور ڈپٹی سپرنٹنڈنٹس کو تبدیل بھی کیا گیاہے اور متعدد نگرانی عملے کو ایک امتحانی سنٹر سے دوسری جگہ تعینات کیا گیا ہے اور سپیشل مانیٹرنگ اور چیکنگ ٹیموں کی رپورٹ پر یہ سلسلہ روزانہ کی بنیاد پر جاری رکھا گیا ہے اس کے ساتھ متعدد نگران عملے کو مستقل طور پر نااہل قرار دینے کے لئے محکمہ تعلیم کے افسران کو ریفرنس بھی بنا کر بھجوائے گئے ہیں اس سے سپرنٹنڈنٹس اور ڈپٹی سپرنٹنڈنٹس سمیت نگران عملے کا آپس میں گٹھ جوڑ (Pairs)بننے کی روک تھام اور بے قاعدگیوں کی شکایات میں 100فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔ کنٹرولر امتحانات نے مزید بتایا کہ اس سے بوٹی مافیا اور نقل کے کلچرکے خاتمے میں بھی 100فیصد کمی واقع ہوئی ہے، جس سے یہ نیا پلان کامیاب رہا ہے۔ تاہم اس کے باوجود پارٹ ون اور پارٹ کے امتحانات میں 180امیدواروں کے خلاف کارروائی کر کے ناجائز ذرائع استعمال کرنے کے الزام میں کیسز بنائے گئے ہیں، جو کہ گزشتہ امتحانات کی نسبت کئی گنا کم شرح یا ریشوہے جس سے بوٹی مافیا اور نقل کے رجحان میں حوصلہ شکنی اور نقل کے رجحان کے خاتمے میں 100 فیصد کامیابی حاصل ہوئی ہے۔
پنجاب یونیورسٹی کے زیر اہتمام ایک روزہ تربیتی ورکشاپ
پنجاب یونیورسٹی سنٹر آف ایکسی لینس ان مالیکولر بائیولوجی کے زیر اہتمام کانگریس آف مالیکولر بائیولوجی اور نیشنل اکیڈمی آف ینگ سائنٹسٹ کے اشتراک سے کرسپر / سی اے ایس 9 کے موضوع پر ایک روزہ تربیتی ورکشاپ کا اہتمام کیا گیا۔ اس موقع پر ڈین فیکلٹی آف لائف سائنسز پروفیسر ڈاکٹر نعیم خان مہمان خصوصی تھے جبکہ شعبہ کے ڈائریکٹر پروفیسر ڈاکٹر طیب حسنین، فیکلٹی ممبران اور نسٹ، نبگی، گورنمنٹ کالج یونیورسٹی فیصل آباد، یونیورسٹی آف ایگریکلچر فیصل آباد، اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور، کوہاٹ یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی، کنئیرڈ کالج لاہور، یونیورسٹی آف ویٹرنری اینڈ اینیمل سائنسز لاہور، سائنس کالج لاہور، یونیورسٹی آف لاہور، یونیورسٹی آف ایجوکیشن اور پنجاب یونیورسٹی کے مختلف شعبہ جات سے50 سے زائد سائنسدانوں نے ورکشاپ میں شرکت کی۔ اس موقع پر امریکہ کی یونیورسٹی آف کیمبرج کے خیام جاوید نے کرسپر ٹیکنالوجی پر ورکشاپ کے شرکاء کو عملی تربیت دی۔ ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسر ڈاکٹر نعیم خان نے منتظمین کو کامیاب قومی ورکشاپ کے انعقاد پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ ایسی ورکشاپس کے انعقاد سے ہم انوویشن کی جانب قدم بڑھا سکتے ہیں۔ ڈائریکٹر کیمب پروفیسر ڈاکٹر طیب حسنین نے کہا کہ ایسی ورکشاپس کے انعقاد کا مقصد محققین کو نت نئی ٹیکنالوجیز سے متعارف کرانا اور نئی نئی تبدیلیوں سے آگاہ رکھنا ہے۔ ورکشاپ کے اختتام پر ڈاکٹر طیب حسنین نے شرکاء میں سرٹیفیکیٹس تقسیم کئے۔
یوایم ٹی میں ٹیکسٹائل کے طالبات کے سالانہ تھیسزکی نمائش
یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈٹیکنالوجی میں ٹیکسٹائل اورفیشن ڈیزائننگ کی طالبات کے سالانہ تھیسزکی نمائش کااہتمام کیاگیا۔سکول آف ٹیکسٹائل اورڈیزائن کے تحت منعقد کی جانے والی اس نمائش میں مختلف قسم کے موضوعات پرپیش کیے گئے کام کوخوب سراہاگیا۔ہرقسم کے دھاگوں اوررنگوں کی مددسے تیارکردہ مصنوعات جس میں ملبوسات،جدید بیڈرومز، ڈرائنگ روم،صوفی ازم اور شاعری، شیکسپیئر کادور،قدیم مصری ثقافت،اورپاکستانی کلچر کو ڈیزائن کے ذریعے پیش کیاگیاتھا۔اس کے علاوہ نمائش میں تتلیاں،نیون کلرز، بیٹافش، ڈریگن، ہور و سکوپ ،کاسموگیلکسی،فیشن ربیلین اورضیافت وغیرہ کوظاہرکرنے والے ڈیزائن دیکھنے والوں کی توجہ کاخاص مرکزرہے۔سکول آف ٹیکسٹائل اینڈڈیزائن کے ڈین پروفیسرڈاکٹرممتازحسن ملک نے سٹالزکاوزٹ کیااورطالبات کوبہترین پراجیکٹ پیش کرنے پر مبارکباد دی اوران کی حوصلہ افزائی کی۔
ایس ای سی پی اور ایچ ای سی کاکا یونیورسٹیوں کیلئے فیکلٹی ڈویلپمنٹ پروگرام
سیکورٹیز اینڈ ایکس چینج کمیشن آف پاکستان نے ہائر ایجوکیشن کمیشن اور ورلڈ بینک کے تعاون سے فیکلٹی ڈویلپمنٹ پروگرام منعقد کیا۔ اس پروگرام میں اسلام آباد، راولپنڈی ‘کراچی اور پشاور کی مختلف یونیورسٹوں کے دو سو سے زائدطلباء نے شرکت کی۔ یہ پروگرام ایس ای سی پی اور ایچ ای سی کے مابین طے پانے والی ایک مفاہمتی یاداشت کے تحت منعقد کیا گیا۔ ہائر ایجوکیشن کمیشن سندھ کے ریجنل ڈائریکٹر سلمان احمد اور ایس ای سی پی کی ڈائریکٹر انوسٹر ایجوکیشن خالدہ حبیب نے اس پروگرام کا آغاز کیا۔ انہوں نے تعلیمی اداروں اور غیر بینکاری مالیاتی شعبے اور کیپٹل مارکیٹ کے ریگولیٹر کے مابین مالیاتی نظم و ضبط اور آگاہی پیدا کرنے کے لئے تعاون بڑھانے پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ نئی نسل میں مالیاتی نظم و ضبط بہت ضروری ہے تاکہ وہ بچتوں کی اہمیت اور سرمایہ کاری کے مواقعوں سے آگاہ ہوں اور اداروں میں بھی مالیاتی نظم و ضبط کی اہمیت کو سمجھیں۔ انہوں نے کہا کہ آنے والے دنوں میں دیگر شہروں میں بھی ایسے مزید پروگرام منعقد کئے جائیں گے۔اس موقع پر ایس ای سی پی کے چیئرمین طفر حجازی نے اپنے پیغام میں کہا کہ جدید دور میں ابھرتی اور پھیلتی ہوئی مارکیٹوں کوسمجھنے اور ان سے متعلق چیلنجز کا سامنا کرنے کے لئے ریگولیٹرز اور تعلیمی اداروں کے درمیان پیشہ ورانہ تعلق انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ .کہ سرمایہ کاروں کا تحفظ، ان کو آگاہی فراہم کرنا اور ضروری معلومات کی فراہمی ایس ای سی پی کی انضباتی پالیسی کا اہم حصہ ہے۔ جناب حجازی نے کہا کہ انوسٹر ایجوکیشن کی مہم کا مقصد عام عوا م میں مالیاتی معاملات کے حوالے سے معلومات کی فراہمی اور ساتھ ہی مالاتی معاملات میں درست فیصلہ سازی کا فروغ ہے۔ اس موقع پر پاکستان اسٹاک ایکس چینج کے مینجنگ ڈائریکٹر ندیم نقوی ، صدر سی ایف ای سوسائیٹی پاکستان اشرف باوا، بینک الفاح کے ڈپٹی جنرل مینجرامین داؤد صالح، نیشنل بینک کی ایسٹ مینجمنٹ کمپنی کے سی ای او ڈاکٹر امجد وحید، عارف حبیب ڈولمن ریٹ کے طارق موہر اور کئی دیگر مالیاتی انسٹی ٹیوشن کے سربراہان نے خطاب کیا۔
ماحولیات کا عالمی دن ‘واپڈا اور پنجاب یونیورسٹی کاتقریری‘ پوسٹرسازی مقابلے
واپڈا اور پنجاب یونیورسٹی کے شعبہ ماحولیاتی سائنس نے عالمی ماحولیاتی دن کے حوالے سے مشترکہ طور پر تقاریر اور پوسٹر سازی کے مقابلوں کا اہتمام کیا۔مذکورہ مقابلوں کا مقصد نوجوان نسل میں ماحولیاتی تحفظ کیلئے شعور پیدا کرنا تھا۔تقریری مقابلہ میں محمد علی نے پہلی ، کائنات منیبہ نے دوسری اور ابوبکر نے تیسری پوزیشن حاصل کی۔پوسٹر سازی میں ناجیہ احمد اور عثمان ریاست کے مشترکہ پوسٹر نے پہلی، سحر اسلم اور اقراء راجہ کے مشترکہ پوسٹر نے دوسری جبکہ عروج فاطمہ کے پوسٹر نے تیسری پوزیشن حاصل کی ۔پنجاب یونیورسٹی کے شعبہ ماحولیاتی سائنس کے سربراہ ڈاکٹر ساجد رشید اور واپڈا سی ایس آر سیل کے سینئر منیجر عون مہدی نے پوزیشن حاصل کرنے والے طلباء و طالبات میں شیلڈز اور نقد انعامات تقسیم کئے۔

مزید :

ایڈیشن 2 -