فرانس کا رویہ غیر مناسب ،شہریوں کی بے دخلی کے معاملے میں کسی کی دھمکی میں آئے بغرفیصلہ کریں گے :چودھری نثار

فرانس کا رویہ غیر مناسب ،شہریوں کی بے دخلی کے معاملے میں کسی کی دھمکی میں آئے ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


اسلام آباد(خصوصی رپورٹ)وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے مبینہ پاکستانی شہری محمد منشاء کی بے دخلی کے معاملے پر فرانس کے غیر مناسب رویے پر سخت اور اصولی موقف اختیار کر تے ہوئے کہا ہے کہ کسی کی دھمکی میں آئے بغیر اپنے قانون کے مطابق فیصلہ کریں گے، غیر تصدیق شدہ شخص کو کسی صورت بھی پاکستانی پاسپورٹ کا اجراء نہیں کیا جائے گا، فرانسیسی وزارت کا رویہ نہایت غیر مناسب اور سفارتی آداب کے منافی ہے ۔ذرائع کے مطابق محمد منشاء نامی شخص گذشتہ کئی سالوں سے فرانس میں مقیم تھا جس پر سنگین نوعیت کے اخلاقی جرائم میں ملوث ہونے کا الزام ہے۔فرانسیسی محکمہ داخلہ نے محمد منشاء کو پاکستان ڈیپوٹ کرنے کی غرض سے پاکستانی سفیر کو یہ پیغام دیا کہ محمد منشاء کو دو گھنٹوں میں سفری دستاویزات کا اجراء کیا جائے ورنہ دونوں ملکوں کے تعلقات متاثر ہو سکتے ہیں ۔پاکستانی سفیر نے اسلام آباد میں وزراتِ داخلہ سے رابطہ کیا اور فرانسیسی محکمہ داخلہ کے موقف سے آگاہ کیا۔جب صورتحال وزیرِداخلہ چوہدری نثار علی خان کے علم میں آئی تو انہوں نے سخت موقف اختیار کرتے ہوئے کہ کسی غیر تصدیق شدہ شخص کو کسی صورت بھی پاکستانی پاسپورٹ کا اجراء نہیں کیا جائے گا اور فرانسیسی وزارت کا رویہ نہایت غیر مناسب اور سفارتی آداب کے منافی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کسی بھی دھمکی میں آئے بغیر اپنے قانون کے مطابق فیصلہ کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ اگر محمد منشاء کی ڈیپوٹیشن مطلوب ہے تو پاکستان کے قانون اور مروجہ طریقہ کار کے مطابق اس کے کوائف حکومت پاکستان کو مہیا کیے جائیں تاکہ اس کی شہریت کی تصدیق کی جا سکے۔ وزیرِداخلہ نے کہا کہ محمد منشاء کو لینے کا فیصلہ اسکی شہریت کی بنیاد پر کیا جائے گا۔ انہوں نے واضح کیا کہ محمد منشاء کے معاملے میں اگر حکومت فرانس نے پاکستانی قوانین کی خلاف ورزی کرنے کی کوشش کی تو نہ صرف محمد منشاء کو اسی فلائٹ سے واپس بھیج دیا جائے گا بلکہ محمد منشاء کو غیر قانونی طور پر پاکستان لانے والی ائیر لائنز کو بھی جرمانہ کیاجائے گا۔

مزید :

علاقائی -