پنجاب میں ایف آئی اے کو مطلوب اشتہاریوں کیخلاف گھیرا تنگ، کریک ڈاؤن شروع

پنجاب میں ایف آئی اے کو مطلوب اشتہاریوں کیخلاف گھیرا تنگ، کریک ڈاؤن شروع

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(محمد یونس باٹھ)ڈائریکٹر ایف آئی اے ڈاکٹر عثمان انور نے پنجاب کے تمام ڈپٹی ڈائریکٹر ز صاحبان کو اشتہاری ملزمان کی گرفتاری کا حکم دیتے ہوئے ایک ماہ میں رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی ہے اور کہا ہے کہ ناقص کارکردگی کے حامل افسران کو فوری طور پر تبدیل کر دیا جائے گا۔جس کی ہدایت پر پنجاب بھر میں ایف آئی اے کو مطلوب تمام اشتہاریوں کا گھیرا تنگ کر کے ان کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کر دیا گیا ہے ۔ذرائع کے مطابق پنجاب میں اس وقت 5ہزار سے زائد ایسے اشتہاری موجود ہیں جو ایف آئی اے کو مطلوب ہیں ۔ذرائع نے دعوی کیا ہے کہ ان میں سے متعدد اشتہاری ایف آئی اے اہلکاروں کے ساتھ ساز باز کر کے پنجاب میں ہی گھوم رہے ہیں اور اپنا گھنا ونا کاروبار بھی جاری رکھے ہوئے ہیں ۔انہوں نے ڈپٹی ڈائریکٹر ملتان بابر شہریار ، ڈپٹی ڈائریکٹر گوجرانوالہ خالد انیس ،ڈپٹی ڈائریکٹر فیصل آباد سید علی امام زیدی اور ایڈیشنل ڈائریکٹر سہیل عارف اعوان ،ایڈیشنل ڈائریکٹر شاہد حسن ایڈیشنل ڈائریکٹر محمد احمد ،ڈپپٹی دائریکٹر لا ذوالفقار علی ایڈیشنل ڈائریکٹر ایمی گریشن احمد ارسلان ملک ایڈیشنل ڈائریکٹر سید فرید علی سمیت دیگر افسران سے ایک ہنگامی میٹنگ کرتے ہوئے پنجاب بھر کے اشتہاریوں کی رپورٹ مرتب کرنے کا حکم دیا ہے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ ڈائریکٹر ایف آئی اے ڈاکٹر عثمان انور نے ایئر پورٹ کی حدود میں چینکگ کا سختی سے حکم دیتے ہوئے ایمی گریشن حکام کو کسی بھی شخص کو ان کی اجازت کے بغیر پروٹوکول نہ دینے کا حکم دیا ہے ۔ان کی ان ہدایات کے بعدپنجاب بھر کے تمام ایئر پورٹس پر پروٹو کول کو ختم کر دیا گیا ہے ۔

مزید :

صفحہ آخر -