پولیس اہلکاروں کے خلاف حتمی چالان پیش نہ کرنے پر ڈی پی او مظفر گڑھ کو آج عدالت میں پیش ہونے کا حکم

پولیس اہلکاروں کے خلاف حتمی چالان پیش نہ کرنے پر ڈی پی او مظفر گڑھ کو آج عدالت ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


سیت پور(نمائندہ پاکستان)خضرکہیری جعلی پولیس مقابلہ میں 31پیشیاں لگنے کے باوجود تھانہ سٹی علی پور کی جانب سے پولیس اہلکاروں (بقیہ نمبر31صفحہ12پر )
کے خلاف حتمی چالان پیش نہ کرنے پر ایڈیشنل سیشن جج علی پور بلال بیگ نے ڈی پی او مظفرگڑھ احمداویس ملک کو آج مورخہ 10جون بروز جمعہ کو اپنی عدالت میں پیش ہونے کا حکم دیا ہے واضح رہے کہ نومبر2014میں سی آئی سٹاف علی پور کے اہلکار علی پور کے نواحی علاقہ گھلواں کی بستی ٹبہ کے رہائشی نوجوان خضرکہیری کے گھر کے اندر داخل ہوگئے تھے طیش میںآکر خضر کہیری نے ایک پولیس اہلکار منصور گھلو کو فائرنگ کرکے زخمی کردیاتھا بعدازاں مقامی پولیس نے اپنے زخمی ساتھی کا انتقام لینے کی خاطر خضرکہیری کو مبینہ پولیس مقابلے میں پار کردیا تھا ہائی کورٹ ملتان بنچ کے حکم پر ہونے والی جوڈیشنل انکوائری میں پولیس مقابلہ جعلی ثابت ہوا جبکہ آر آئی بی برانچ ملتان میں پولیس انکوائری میں سی آئی سٹاف مظفرگڑھ کے انچارج ریحان رسول افغان انچارج تحصیل علی پور امتیاز بھٹہ اے ایس آئی محمد خان نیازی کانسٹیبلان قاضی شہباز،اصغر مرکنڈ اور طارق منظور کو گنہگار بتایا گیا تاہم تھانہ سٹی علی پور مقدمہ نمبر56/15کاحتمی چالان ابھی تک عدالت میں پیش نہیں کررہی جس کی وجہ سے گزشتہ روزایڈیشنل سیشن جج علی پور نے ڈی پی او مظفرگڑھ کو آج 10جون کو اپنی عدالت میں پیش ہونے کا حکم دیا ہے۔