پاکستان کو دن رات بڑھکیں مارنے والے بھارت کو سب سے بڑے خطرے کا سامنا، صرف چند دن باقی رہ گئے اور پھر۔۔۔

پاکستان کو دن رات بڑھکیں مارنے والے بھارت کو سب سے بڑے خطرے کا سامنا، صرف چند ...
پاکستان کو دن رات بڑھکیں مارنے والے بھارت کو سب سے بڑے خطرے کا سامنا، صرف چند دن باقی رہ گئے اور پھر۔۔۔

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ممبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت پاکستان کے حصے میں آنے والے دریاﺅں کے پانی پر قبضہ کرکے پاکستان کو بنجر بنانے کی کوششوں میں تو لگا ہے مگر خود اس کے ساتھ جو ہونے والا ہے وہ بہت ہی بھیانک ہے۔ ممبئی جو بھارت کا سب سے بڑا شہر ہے ، پہلے ہی پانی کی شدید قلت کا شکار رہتا ہے مگر اب ایک رپورٹ کے مطابق وہ عنقریب پانی کے شدید بحران کا شکار ہونے والا ہے۔

پاکستان اور چین خطے کے چودھری بننا چاہتے ہیں،امریکہ سے مل کر اپنے آئیڈیاز پر عمل کرنے کا وقت آگیا:مودی

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ممبئی کو پانی فراہم کرنے والی جھیلوں اور دیگر ذخائر میں صرف 25دن کا ذخیرہ باقی رہ گیا ہے۔ ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق اگست 2015ءمیں ممبئی کو دیئے جانے والی پانی میں 20فیصد کمی کی گئی تھی، مگر اس کے باوجودگزشتہ سال 9جون کی نسبت ذخائر میں 67ہزار 816 ملین لیٹر پانی کم ہے۔ ممبئی کو پانی فراہم کرنے والی 7جھیلوں میں رواں سال 9جون کو 1.42لاکھ ملین لیٹر پانی موجود تھا جو گزشتہ سال اسی روز 2لاکھ ملین لیٹر تھا۔ گزشتہ سال شہر کو پانی کی فراہمی کم کیے جانے سے قبل ممبئی کو 3ہزار 750ملین لیٹر پانی روزانہ دیا جا رہا تھا جو اب 3ہزار 200ملین لیٹر دیا جا رہا ہے۔ ریاستی حکومت نے تمام میونسپل کارپوریشنز کو پابند کر دیا ہے کہ آئندہ مون سون تک سوئمنگ پولز کو قطعاً پانی فراہم نہ کیا جائے۔ ریاستی حکومت شہر کے شاپنگ مالز، بڑے ہوٹلوں، فیکٹریوں اور کھیل کے میدانوں کو فراہم کیے جانے والے پانی میں 50فیصد کمی کر چکی ہے مگر اس کے باوجود پانی کے فقدان میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ شہری انتظامیہ کے ایک عہدیدار کا کہنا ہے کہ ”گزشتہ سال ان دنوں میں بھاٹسا اور تانسا جھیلوں میں بارش کا پانی آنے لگا تھاجو اس سال نہیں آیا کیونکہ اس سال بارشیں کم ہوئی ہیں۔“