کا لا باغ ڈیم کے پراجیکٹ کو سیاست کی نذرکرنا قومی جرم ہے:راجہ حسن اختر

کا لا باغ ڈیم کے پراجیکٹ کو سیاست کی نذرکرنا قومی جرم ہے:راجہ حسن اختر

لاہور (کامرس رپورٹر)کالاباغ ڈیم پاکستان کی بقاء کا مسئلہ ہے،کا لا باغ ڈیم کے پراجیکٹ کو سیاست کی نظر کرنا قومی جرم ہے۔ پاکستان توانائی بحران سے گزر رہا ہے، پاکستان کے لیے ڈیمززندگی موت کا مسئلہ ہیں۔ ڈیم نہ بنانے کی وجہ سے پاکستان ایک طرف اندھیروں میں ڈوبا ہوا ہے تو دوسری طرف زراعت دم توڑ رہی ہے ۔ ان خیالات کا اظہارلاہور چیمبر(بزنسمین فرنٹ گروپ ) کے صدر و فیڈریشن آفپاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی) ریجنل قائمہ کمیٹی برائے’’کان کنی و معدنیات‘‘ کے چےئرمین راجہ حسن اختر نے انرجی بحران اور زراعت کے شعبہ کی بدحالی پر ردعمل دیتے ہوئے اپنے ایک بیان میں کیا۔

انہوں نے کہاکہ ہم ہر سال اپنے دریاؤں کا پانی سمندر میں پھینک کر ضائع کر دیتے ہیں۔پانی نہ ہونے کی وجہ سے فصلیں تباہ ہو رہی ہیں۔ ڈیم نہ بنانے کی وجہ سے ہماری صنعت اور زراعت تباہی کا منظر پیش کر رہی ہے۔ حیرت اور ایک المیہ ہے کہ پاکستان کے کئی مطلق المنان حکمران اسلام اور پاکستان کا نعرہ تو لگاتے رہے مگر وہ کالا باغ ڈیم نہ بنا سکے۔ راجہ حسن اختر نے مزید کہاکہ حکمرانوں کو چاہئے ہر مفادکو بالائے طاق رکھ کر کالا باغ ڈیم کی تعمیر شروع کر دینی چاہئے ہم اگر دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑ رہے ہیں تو پانی کو ضائع کرنا اور ڈیموں کی مخالفت کرنا انسانوں اور انسانیت کے خلاف جنگ ہے اور یہ سب سے بڑی دہشت گردی ہے۔ اس دہشت گردی کو کچلنا بھی قومی فریضہ ہے۔

مزید : کامرس