سعودی عرب کی خارجہ پالیسی کا محور تحفظ حرمین شریفین ہے، ساجد میر

سعودی عرب کی خارجہ پالیسی کا محور تحفظ حرمین شریفین ہے، ساجد میر

لاہور ( ما نیٹر نگ ڈیسک) مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہاہے سعودی عرب کی خارجہ پالیسی کا محور تحفظ حرمین شریفین ہے،انتہاپسندی اور دہشت گردوں کی مالی معاونت کے خلاف جنگ کے لیے متحدہونے کی ضرورت ہے، حرمین شریفین کی حفاظت کے لیے سعودی اقدامات کی حمایت کریں گے، قطر کو اپنی پالیسیوں پر نظر ثانی کرکے عرب اتحاد کا حصہ بننا چاہیے۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹر ساجد میر کا کہنا تھا کہ ریاض کی سربراہی کانفرنس کا واحد مقصد انسداد ددہشت گردی کی کوششوں کو کامیاب بنانا تھا، اسے خلیجی ممالک میں پھوٹ ڈالنے سے تعبیر نہیں کرنا چاہیے، دہشت گردی کے خلاف سعودی اقدامات کوفرقہ وارانہ رنگ دینا ناانصافی ہے،عرب ممالک کے ساتھ جاری کشیدگی دور کرنے کے لیے قطر کو اپنی خارجہ پالیسی پر نظرثانی کرنی چاہیے، اسے اخلاص کے ساتھ خلیجی ممالک کے اتحاد کا حصہ بننا چاہیے۔ پروفیسر ساجد میر نے مزید کہا کہ بڑھتے ہوئے بحران کے حل کے لیے پاکستان سمیت دوسرے اسلامی ممالک کی سفارتی کوششیں جاری رہنی چاہیے اور اس مسئلے کا کوئی سیاسی حل نکالنا چاہیے، قطر کو اخوان المسلمون کے علاوہ دولتِ اسلامیہ اور دیگر شدت پسند تنظیموں کی حمایت کے الزام پراپنی پوزیشن واضح کرنی چاہیے۔

مزید : صفحہ آخر