پاکستان اور سویڈن کا دوطرفہ تجارت اور سرمایہ کاری سمیت مختلف شعبوں میں تعاون پر اتفاق

پاکستان اور سویڈن کا دوطرفہ تجارت اور سرمایہ کاری سمیت مختلف شعبوں میں تعاون ...

سٹاک ہوم (صباح نیوز) پاکستان اور سویڈن کے درمیان دوطرفہ سیاسی مشاورتی اجلاس کا پندرہواں دور سٹاک ہوم میں ہوا۔ پاکستانی وفد کی قیادت وزارت خارجہ کے ایڈیشنل سیکرٹری برائے یورپ ظہیر احمد جنجوعہ نے کی جبکہ سویڈن کے وفد کی قیادت ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل برائے ایشیا سسلیا روتھسٹرام روئن نے کی۔ بات چیت خوشگوار اور دوستانہ ماحول میں ہوئی۔ دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور دوطرفہ تعاون کو مزید مضبوط بنانے خصوصاً تجارت، معیشت، سرمایہ کاری، ثقافت، تعلیم، آئی ٹی، ٹیلی کمیونیکیشن، سائنس اینڈ ٹیکنالوجی اور پارلیمانی شعبوں میں تعاون کے فروغ کے مواقع پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ دونوں ملکوں کے وفود نے اپنے اپنے خطوں میں امن و سلامتی کی صورتحال پر بھی تفصیلی روشنی ڈالی۔ پاکستانی وفد نے سویڈن کے وفد کو پاکستان کی پرامن ہمسایوں کی پالیسی اور بھارت کے ساتھ امن اور دوستانہ تعلقات کے حوالے سے پاکستان کی پالیسی پر بریفنگ دی۔ اس موقع پر مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں سے بھی آگاہ کیا گیا جبکہ سویڈن کے وفد نے سویڈن اور یورپ میں سکیورٹی کی صورتحال سے آگاہ کیا۔ اجلاس میں باہمی دلچسپی کے بین الاقوامی امور پر بھی تبادلہ کیا گیا۔ ایڈیشنل سیکرٹری برائے یورپ نے نیوکلیئر سپلائر گروپ کی رکنیت کے لئے پاکستان کی اہلیت سے متعلق سے آگاہ کیا جبکہ این پی ٹی پر دستخط نہ کرنے والے ممالک کیلئے نیوکلیئر سپلائر گروپ کی رکنیت کے حوالے سے غیرامتیازی اور معیار پر مبنی طریقہ کار اختیار کرنے پر زور دیا۔ دونوں ممالک نے اقوام متحدہ اور دوسرے عالمی فورمز پر باہمی تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا۔ پاکستان اور سویڈن کے درمیان خوشگوار اور دوستانہ تعلقات ہیں۔ پاکستان سویڈن کو یورپی یونین میں ایک اہم ملک تصور کرتا ہے۔ اس طرح کی مشاورت سے دوطرفہ تعلقات کے حوالے سے بات چیت کا موقع ملتا ہے اور باہمی تعاون کو مختلف شعبوں میں فروغ دینے کے مواقع میسر آتے ہیں۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ یہ مشاورتی عمل تواتر سے جاری رہے گا اور اگلا مشاورتی اجلاس 2018ء کو اسلام آباد میں ہو گا۔

مزید : صفحہ آخر