پاناما کیس وزیر اعظم کے صاحبزادے پانچویں مرتبہ جے آئی ٹی کے سامنے پیش، عدالت یا حکومت شکوک وشبہات پر کارروائی نہیں کر سکتی : حسین نواز

پاناما کیس وزیر اعظم کے صاحبزادے پانچویں مرتبہ جے آئی ٹی کے سامنے پیش، عدالت ...

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) پانامہ لیکس کی تحقیقات کے سلسلے میں حسین نواز پانچویں مرتبہ جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہو ئے ،تحقیقاتی ٹیم کی جانب سے 5گھنٹے سے زائد پوچھ گچھ کی گئی جبکہ حسین نوازنے مزید دستاویزات بھی جمع کرا ئیں، حسین نواز کے ا ستقبا ل کیلئے آئے ایم ڈی پی ٹی ڈی سی عبدالغفور چوہدری جوڈیشل اکیڈمی میں داخل ہونے کی کوشش میں پولیس افسران سے الجھ پڑے، سنگین نتائج کی دھمکیاں بھی دیں۔ تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم نواز شریف کے صاحبزادے حسین نواز گزشتہ روز پانامہ کیس کی تحقیقات کے سلسلے میں پانچویں مرتبہ جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے جہاں ان سے 5گھنٹے سے زائدپوچھ گچھ کی گئی،حسین نواز نے جے آئی ٹی کو مطلوب مزید دستاویزات بھی جمع کرا دی ہیں۔ وزیراعظم کے صاحبزادے جے آئی ٹی میں پیشی کیلئے جوڈیشل اکیڈمی 11 بجے پہنچے۔حسین نواز کی پیشی کے موقع پر کارکنوں سمیت لیگی رہنما بھی جوڈیشل اکیڈمی کے باہر موجود تھے۔پیشی سے قبل حسین نوازنے جوڈیشل اکیڈمی کے باہر میڈیا کے نمائندوں کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے کہا جے آئی ٹی کیہاتھ کچھ نہیں آئے گا اگر کوئی ثبوت ملتا ہے تو اس کیخلاف کاروائی ہونی چاہئے۔میرا الیکشن لڑنے کا کوئی ارادہ نہیں، جس کمرے میں بٹھایا جاتا ہوں وہاں سی سی ٹی وی کیمرہ موجود ہے۔ حسن نواز نے میڈیا سے بات نہیں کی یہ ان کا ذاتی فیصلہ تھا، تحقیقات سے مجھے نہیں جے آئی ٹی والوں کو مطمئن ہونا ہے، جے آئی ٹی کو کرپشن کا کوئی ثبوت نہیں ملے گا،جنہوں نے تصویر لیک کی ہے اس کا مقصد بھی وہی بتائیں گے تاہم میرا مطالبہ ہے کہ ذمہ داروں کیخلاف کارروائی کی جائے، جے آئی ٹی پر سوالات اٹھ رہے ہیں کہ آخر میری تصویر کس طرح لیک ہوئی ۔ کوئی حکومت اورعدالت شکوک وشبہات پر کارروائی نہیں کرسکتی، ثبوت پر کارروائی ہوتی ہے تو ہونی چاہیے۔ کارکنوں کا شکرگزار ہوں جو یہاں تشریف لائے اور ان ماؤں کا بھی جو گھروں میں بیٹھ کرمیرے لیے دعا کرتی ہیں۔ سوالات سے نہیں لگتا جے آئی ٹی انھیں دوبارہ بلائے گی، تاہم جے آئی ٹی جب بھی بلائے گی میں آؤں گا ۔ ا یک خاص سیاسی جماعت کی وجہ سے یہ معاملہ اٹھایا گیا، شکوک و شبہات پر کسی کیخلاف کارروائی نہیں کی جاسکتی، شک سے بچنا چاہیے، یہ ایک شیطانی عمل ہے۔حسین نواز کی جے آئی ٹی میں پیشی کے موقعہ پر فیڈرل جوڈیشل اکیڈمی کے باہر سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔اس موقع پر حسین نواز کے استقبال میں شامل ایم ڈی پی ٹی ڈی سی چوہدری عبدالغفور جوڈیشل اکیڈمی میں جانے لگے تو پولیس نے روک لیا جس پر وہ پولیس افسران سے الجھ پڑے اور انہیں سنگین نتائج کی دھمکیاں اور گالیاں دیتے ہوئے کہا ہم نواز شریف کے شیر ہیں کسی سے ڈرنے والے نہیں۔ ڈی ایس پی سے نمٹ لوں گا، تاہم سکیورٹی پر موجود پولیس حکام اور اہلکاروں نے انہیں جوڈیشل اکیڈمی نہ جانے دیا ۔واضح رہے ایک روز قبل وزیراعظم کے چھوٹے صاحبزادے حسن نواز بھی جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے تھے جن سے جے آئی ٹی نے 5 گھنٹے طویل تفتیش کی تھی۔

مزید : صفحہ اول