افغانستان پاکستان پر الزام لگا کر اپنی حکومت نہیں بچا سکتا: شیری رحمن

افغانستان پاکستان پر الزام لگا کر اپنی حکومت نہیں بچا سکتا: شیری رحمن

اسلام آباد (این این آئی) پاکستان پیپلز پارٹی کی رہنما سینیٹر شیری رحمن نے کہاہے کہ افغان حکام پاکستان پر الزامات لگانے سے پہلے اپنے گریبان میں جھانکیں ٗ افغان حکومت پاکستان کے ساتھ جھگڑامول لے کر اپنی حکومت نہیں بچا سکتی اور نہ ہی وہ عوام کی خدمت کرسکیں گے ٗ قطر اور سعودی عرب کے درمیان ثالثی کے لئے پاکستان کو اپنے وژن کے مطابق کردار ادا کرنا ہوگا۔جمعہ کو پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر (بقیہ نمبر33صفحہ12پر )

میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ افغانستان میں جب دھماکہ ہوتا ہے تو افغانستان کے صدر پاکستان پر اس کا الزام لگادیتے ہیں پاکستان کو مورد الزام ٹھہرانا درست نہیں ٗافغانستان کو اپنے گریبان میں جھانکنا ہو گا ۔ انہوں نے کہاکہ افغان حکومت عوام کی خدمت کرنے میں ناکام ہو چکی ہے،افغان عوام کا اعتماد بھی حکومت سے ختم ہو گیا ہے جبکہ افغان حکومت اپنے ملک میں امن وامان قائم کرنے میں ناکام ہوچکی ہے۔ سینیٹر شیری رحمن نے کہاکہ افغان حکومت پاکستان کے ساتھ جھگڑامول لے کر اپنی حکومت نہیں بچا سکتی اور نہ ہی وہ عوام کی خدمت کرسکیں گے، افغانستان کسی کی زبان بول رہا ہے اور اسے بند ہوناچاہیے،کابل حکومت ملک میں استحکام لانے میں بری طرح ناکام ہو چکی ہے ۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ قطر اور سعودی عرب کے درمیان ثالثی کے لئے پاکستان کو اپنے وژن کے مطابق کردار ادا کرنا ہوگا، ثالثی کی پیشکش کی ہے دونوں ممالک کے دورے کرکے وزیر اعظم اپنا کردار ادا کریں ۔ ایک اورسوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ شیخ رشید کے ساتھ پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر واقعہ انتہائی نامناسب ہے اس سے پارلیمنٹ کاتقدس مجروع ہواہے۔ پیسے مانگنے اور لینے کے لے گھر سمیت دیگر جگہیں بھی ہیں اس طرح کے تماشے پارلیمنٹ کے باہر لگانا درست نہیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر