پشاور ریپڈبس منصوبے کیلئے 55ملین روپے مختص کرنا حکومت کا انقلابی کارنامہ ہے :ملک شاہ محمد

پشاور ریپڈبس منصوبے کیلئے 55ملین روپے مختص کرنا حکومت کا انقلابی کارنامہ ہے ...

پشاور( سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی برائے ٹرانسپورٹ ملک شاہ محمد خان وزیر نے پشاور ریپڈ بس ماس ٹرانزٹ منصوبے کے لئے مالی سال2017-18کے ترقیاتی بجٹ میں 53ملین روپے مختص کرنا صوبائی حکومت کا ایک انقلابی کارنامہ قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ اس منصوبے کے ذریعے پشاور اور ملحقہ علاقوں کو بہترین سفری سہولیات میسر آ سکیں گی جو8مہینے کی قلیل مدت میں پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے گا۔وزیر اعلیٰ کے معاون خصوصی برائے ٹرانسپورٹ نے جمعہ کے روز سول سیکرٹریٹ میں صوبائی سالانہ بجٹ2017-18پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت کی طرف سے خیبر پختونخوا کے عوام کیلئے بالعموم اور پشاور کیلئے باالخصوصBRT(بس ریپڈ ٹرانزٹ) کے لئے 53ملین روپے مختص کرنا خوش آئند قدم ہے۔ پشاور چونکہ ایک تاریخی اور تجارتی مرکز ہے اور اس منصوبے سے پشاور کی پرانی اہمیت بحال ہو جائے گی۔ پشاور کی بی آر ٹی بین الاقوامی معیار کے مطابق بن رہی ہے جو دنیا کے جدید ترین ماس ٹرانزٹ سسٹم میں سے ایک ہے۔انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخواکے عوام کی طرف سے ہم وزیر اعلیٰ پرویزخٹک اور چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان کا شکریہ ادا کرتے ہیں کہ انہوں نے محکمہ ٹرانسپورٹ کی تبدیلی کاوعدہ پورا کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ پشاور کے ٹریفک جام کا مسئلہ انتہائی پیچیدہ تھا اور سابقہ حکومتوں نے اس طرف کوئی خاص توجہ نہیں دی تھی۔ ملک شاہ محمد وزیر نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت نے صوبائی بجٹ2017-18میں بنوں سدرن لنک روڈ کے لئے 2ارب روپے اور باران ڈیم کے لئے 5ارب روپے کی منظوری دے کر بنوں اورلکی مروت کے عوام کے دل جیت لئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ سدرن لنک روڈ سے نہ صرف بنوں ڈویژن بلکہ وسطی ایشیائی ممالک تک کے لوگوں کو فائدہ پہنچے گا۔بنوں غلام خان ہائی وے اور انڈس ہائی وے کے لنک ہونے سے تجارتی سرگرمیاں عروج پر ہوں گی۔انہوں نے کہا کہ سدرن لنک روڈ صرف بنوں ڈویژن تک محدود نہیں ہے بلکہ یہ فا ٹا،افغانستان اور وسطی ایشیائی ممالک سے تجارتی سرگرمیوں کے لئے استعمال ہوگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ صوبائی ADP(ترقیاتی فنڈ) انتہائی متوازن ہے اور اس میں غریب لوگوں کا خیال رکھا گیا ہے۔ صوبائی حکومت نے ایسے منصوبے منظور کئے ہیں جو خیبر پختونخوا کے مستقبل کیلئے انتہائی مفید ہیں اور عوام کی ضرورت بھی ہیں۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ عوام دوست پالیسیوں کی وجہ سے آئندہ وقت بھی پی ٹی آئی کا ہوگا کیونکہ عوام کا شعور بیدار ہو گیا ہے اور انہیں کھوکھلے نعروں سے ورغلایا نہیں جا سکتا۔

 

مزید : پشاورصفحہ آخر