’میں نے امیر قطر سے کہا آپ لات مار کر امریکیوں کو ملک سے باہر کیوں نہیں نکال دیتے، تو وہ کہنے لگے ایسا کیا تو میرے اپنے عرب بھائی۔۔۔‘ وہ کڑوا سچ جسے جان کر پوری دنیا کے مسلمانوں کی آنکھیں نم ہوجائیں

’میں نے امیر قطر سے کہا آپ لات مار کر امریکیوں کو ملک سے باہر کیوں نہیں نکال ...
’میں نے امیر قطر سے کہا آپ لات مار کر امریکیوں کو ملک سے باہر کیوں نہیں نکال دیتے، تو وہ کہنے لگے ایسا کیا تو میرے اپنے عرب بھائی۔۔۔‘ وہ کڑوا سچ جسے جان کر پوری دنیا کے مسلمانوں کی آنکھیں نم ہوجائیں

  

دوحہ(مانیٹرنگ ڈیسک) امت مسلمہ کے اتحاد کی سر توڑ کوششیں نجانے کتنی مدتوں سے جاری ہیں لیکن مجال ہے جو اس سمت میں کبھی ذرا بھی مثبت پیش رفت ہوئی ہو۔ اور ہو بھی کیسے کہ جب مسلم ممالک خود ہی ایک دوسرے کی جان کے دشمن بنے ہیں۔

آل ثانی خاندان کے افرادکے دہشت گردی کی ملوث ہونے کادعویٰ، قطری حکام کالعدم تنظیموں کی براہ راست معاونت کرتے ہیں: امریکی اینٹلی جنس

مسلمانوں کی اپنوں سے دشمنی اور غیروں سے دوستی کا ایک ایسا ہی واقعہ معروف صحافی رابرٹ فسک نے اپنے تازہ ترین مضمون میں بیان کیا ہے۔ دی انڈیپنڈنٹ میں شائع ہونے والی چشم کشا تحریرمیں وہ کہتے ہیں کہ ”آج قطر کے امیر شیخ تمیم کو اس بات کی امید ہے کہ قطر میں موجود امریکا کی بہت بڑی ایئربیس سعودی افواج کے قطر میں داخل ہونے کی راہ میں رکاوٹ ہو گی۔ جب ایک بار میں نے قطری امیر کے والد شیخ حماد (جنہیں بعد میں تمیم نے ہٹا دیا ) سے پوچھا کہ وہ امریکیوں کو قطر سے نکال باہر کیوں نہیں کرتے تو ان کا جواب تھا ’ اگر میں نے ایسا کیا تو میرے عرب بھائی مجھ پر چڑھ دوڑیں گے۔‘ اب بیٹے کا معاملہ بھی باپ والا ہی ہے۔“

اس مضمون کا بقیہ حصہ پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں

مزید : عرب دنیا