جوڈیشل مجسٹریٹ نے گردہ سکینڈل میں گرفتار گردوں کے 2خریداروں کی درخواست ضمانت مسترد کردی

جوڈیشل مجسٹریٹ نے گردہ سکینڈل میں گرفتار گردوں کے 2خریداروں کی درخواست ضمانت ...
جوڈیشل مجسٹریٹ نے گردہ سکینڈل میں گرفتار گردوں کے 2خریداروں کی درخواست ضمانت مسترد کردی

  

لاہور(نامہ نگار)ضلع کچہری کے جوڈیشل مجسٹریٹ نے گردہ سکینڈل میں گرفتار گردوں کے دو خریداروں کی ضمانت پر رہائی کی استدعا مسترد کرتے ہوئے ڈاکٹر فواد اور ڈاکٹر التمش کے ایجنٹوں اور گردہ ڈونرز کی ضمانت کی درخواستوں پر 12جون کو وکلائکو مزید دلائل کے لئے طلب کر لیا ہے۔

کرپشن کی شکایات ،سیشن جج لاہورنےسپیشل جوڈیشل مجسٹریٹس کے کلرکوں کو کام سے روک دیا

جوڈیشل مجسٹریٹ فاروق اعظم سوہل نے ڈاکٹر فواد اور ڈاکٹر التمش کے ایجنٹوں صفیہ بی بی، محمد اطہر، قمر عباس ، گردہ خریدنے والے عمانی نیشنل منیرہ احمد اور عیسی علی اور گردہ فروخت کرنے والے ملزموں ناہید اختر اور سید عامر کی ضمانت کی درخواستوں پر سماعت کی، ایف آئی اے کے پراسکیوٹر نے موقف اختیار کیا کہ انسانی اعضاءکی تجارت ناقابل ضمانت جرم ہے اور سپریم کورٹ کے فیصلوں کی روشنی میں بھی ملزموں کا جرم معاشرے کے خلاف ہے،پراسکیوٹر نے مزید دلائل دیتےہوئے کہا  کہ گردہ خریدنے والے ملزموں کی ضمانت پر رہائی کے بعد ان کے بیرون ملک فرار ہونے کا خدشہ ہے غیر ملکی گردہ خریدار وزٹ ویزہ پر پاکستان داخل ہوئے جبکہ ڈاکٹر فواد کے ایجنٹ ملزم صفیہ بی بی ، قمر عباس ، اطہر مریضوں اور گردہ ڈونرز کا بندوبست کرتے تھے اور ایف آئی اے نے گردہ فروخت کرنے والے ناہید اختر اور سید عامر کو چھاپے کے دوران گرفتار کیا تھا، ملزموں کی ضمانت پر رہائی کی درخواستیں خارج کی جائیں،عمانی نیشنل گردہ خریداروں کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ غیر ملکیوں کا میو ہسپتال میں بہتر علاج نہیں کیا جا رہا، انہوں نے ایف آئی اے کے موقف کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں میڈیکل کا ویزہ موجود نہیں اور اسی وجہ سے ملزم وزٹ ویزہ حاصل کر کے پاکستان آئے، ملزموں کو گردہ سکینڈل کے مقدمہ میں بے بنیاد ملوث کیا گیا ہے، ملزموں کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا جائے، عدالت نے فریقین کے تفصیلی دلائل سننے اور ریکارڈ کا جائزہ لینے کے بعد گردہ سکینڈل میں گرفتار گردوں کے دو خریداروں کی ضمانت پر رہائی کی استدعا مسترد کرتے ہوئے ڈاکٹر فواد اور ڈاکٹر التمش کے ایجنٹوں اور گردہ ڈونرز کی ضمانت کی درخواستوں پر12 جون کو وکلاءکو مزید دلائل کے لئے طلب کر لیا ۔

مزید : لاہور