صارف عدالت نے چھتوں کا کام ٹھیک نہ کرنے پر میسرز واٹر پروفنگ سروس کے مالک کو 50ہزار روپے ہرجانہ عائد کردیا

صارف عدالت نے چھتوں کا کام ٹھیک نہ کرنے پر میسرز واٹر پروفنگ سروس کے مالک کو ...
صارف عدالت نے چھتوں کا کام ٹھیک نہ کرنے پر میسرز واٹر پروفنگ سروس کے مالک کو 50ہزار روپے ہرجانہ عائد کردیا

  

لاہور(نامہ نگار)صارف عدالت کے جج محمد طاہر نواز نے چھتوں کا کام ٹھیک طریقے سے نہ کرنے پر میسرز واٹر پروفنگ سروس لاہور کینٹ کے مالک کو 50ہزار روپے ہرجانہ اور ایک لاکھ 40ہزارروپے کی رقم درخواست گزار کو واپس کرنے کا حکم دے دیا ۔

سیشن جج نے ریکارڈ روم میں پڑے 4سال پرانے ریکارڈ کو تلف کرنے کا حکم دے دیا

صارف  عدالت میں واپڈا ٹاون کے رہائشی جاوید صدیقی نے گھر کی چھتیں صحیح تیار نہ کرنے پر واٹر پروفنگ سروس لاہور کینٹ کے مالک عظمت ہاشمی کے خلاف دعویٰ دائر کررکھا تھا جس میں موقف اختیار کیا کہ اس نے واٹر پروفنگ سروس لاہور کینٹ کے مالک سے گھر کی چھتیں تیار کروائیں اور  جب جھتیں تیار ہو گئیں تو ان میں لیکیج شروع ہو گئی اس نے بہت کوشش کی کہ کمپنی کا مالک اس کو دوبارہ ٹھیک کردے لیکن اس نے کوئی شنوائی نہیں کی اس نے کام کے ایک لاکھ 40ہزار روپے وصول کیے تھے عدالت سے استدعا ہے کہ اسے ہرجانہ اور دی گئی رقم واپس دینے کا حکم دیا جائے ،عدالت نے فریقین کو طلب کیا ، دونوں کا موقف سننے ے بعد کمپنی کے مالک کو 50ہزارروپے جرمانہ اور درخواست گزار کو ایک لاکھ 40ہزاررپے کی رقم واپس کرنے کا حکم جاری کردیا ہے۔

مزید : لاہور