مایوسیوں کے خاتمے کیلئے حکومت اور حزب اختلاف اپنا کردار ادا کرے،انتہاء پسندی کے خلاف متحد  پاک فوج کے شانہ بشانہ ہیں:علامہ طاہر اشرفی

مایوسیوں کے خاتمے کیلئے حکومت اور حزب اختلاف اپنا کردار ادا کرے،انتہاء ...
مایوسیوں کے خاتمے کیلئے حکومت اور حزب اختلاف اپنا کردار ادا کرے،انتہاء پسندی کے خلاف متحد  پاک فوج کے شانہ بشانہ ہیں:علامہ طاہر اشرفی

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کی سلامتی و استحکام کے خلاف ہونےو الی سازشوں کے خاتمے کیلئے اتحاد وقت کی ضرورت ہے،مایوسیوں کے خاتمے کیلئے حکومت اور حزب اختلاف کو اپنا کردار ادا کرنا ہو گا،تمام مکاتب فکر کے علما و مشائخ دہشت گردی اور انتہاء پسندی کے خلاف متحد  اور پاک فوج اور ملک کے سلامتی کے اداروں کے شانہ بشانہ ہیں،مکہ المکرمہ میں ہونے والی تمام کانفرنسز کے اعلامیوں کی تائید کرتے ہیں،چارٹر آف مکہ انتہاء پسندی اور دہشت گردی کے خلاف عظیم کوشش ہے۔

یہ بات پاکستان علماء کونسل کے زیر اہتمام دارالافتاء پاکستان میں ہونے والی عید ملن پارٹی سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہی، پاکستان علماء کونسل کے مرکزی چیئرمین اور دارالافتاء پاکستان کے صدر حافظ محمد طاہر محمود اشرفی ،مولانا اسد اللہ فاروق، مولانا زبیر زاہد ، مولانا اسلم قادری، مولانا قاری عبد الحکیم اطہر، مولانا قاری مبشر رحیمی، مولانا اسلام الدین، مولانا نعمان حاشر ، مولانا طاہر عقیل اعوان ،مولانا الطاف گوندل ، مولانا لیاقت علی لالیکا، مولانا مدثر اقبال، مولانا انعام الرحمن رحیمی، قاری شمس الحق اور دیگر نے کہا کہ پاک فوج اور ملک کے سلامتی کے اداروں کی جدوجہد سے دہشت گردی اور انتہاء پسندی پر قابو پایا گیا ہے،پاکستان کی سلامتی اور استحکام کے خلاف سازشوں کے خاتمے کیلئے ملک کی تمام سیاسی و مذہبی قوتوں کو متحدہونا ہو گا،علماء نے کہا کہ سیاسی قائدین ایک دوسرے کے خلاف نازیبااور غیر مہذب زبان استعمال کرنا بند کریں،ملک میں مذہبی رواداری کے ساتھ سیاسی رواداری کی بھی ضرورت ہے ،پاکستان کے خلاف اسرائیل اور بھارت مل کر سازشیں کر رہے ہیں جسے سعودی عرب نے دیگر برادر اسلامی ممالک کے ساتھ مل کر ناکام بنایا ہے،حکومت پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ ملک کے سلامتی کے معاملات پر ملک کی تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں کو اعتماد میں لے ۔

انہوں نے وزیرستان اور دیگر علاقوں میں افواج پاکستان اور دیگر سلامتی کے اداروں پر حملوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پاک فوج اور سلامتی کے اداروں کی قربانیوں سے آج وطن عزیز میں امن و استحکام ہے ، علماء نے رابطہ عالم اسلامی اور اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) مکہ المکرمہ میں ہونے والی کانفرنسز کے فیصلوں کی تائید کرتے ہوئے کہا کہ 1200 سے زائد عالم اسلام کے مذہبی و سیاسی قائدین کی طرف سے چارٹر آف مکہ المکرمہ انتہاء پسندی اور دہشت گردی کے خلاف مسلمانوں کے مرکز ارض الحرمین الشریفین سے عظیم پیغام ہے جس کو اقوام متحدہ اور او آئی سی کے ذریعے قانونی شکل دینی چاہیے ،پاکستان علماء کونسل کے مرکزی چیئرمین حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے ذرائع ابلاغ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے موجودہ حالات کے تناظر میں 13 جون کو لاہور میں پاکستان علماء کونسل کی مرکزی مجلس شوریٰ کا اجلاس ہو گا

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -