بجٹ میں عوام کو ریلیف نہ ملا تو نفرت بڑھے گئی ،امیر العظیم

  بجٹ میں عوام کو ریلیف نہ ملا تو نفرت بڑھے گئی ،امیر العظیم

لاہور(سٹی رپورٹر )امیرجماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب امیر العظیم نے کہا ہے کہ موجودہ حکمرانوں کی مایوس کن کارکرگی المیہ ہے۔ تحریک انصاف کی غیر دانشمندانہ پالیسیوں کی وجہ سے عوام پہلے ہی مہنگائی کے عذاب سے دوچار ہیں جبکہ وزیر خزانہ قوم کو طفل تسلیاں دے رہے ہیں۔حکمرانوں کی نااہلی اورنا قابل فہم اقدامات ہی ان کے دعوﺅں کی نفی کر رہے ہیں ۔بجٹ میں غریب عوام کو ریلیف نہ ملا تو حکومت کے خلاف عوام کی نفرت بڑھے گئی ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے مختلف پروگرامات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ اقتصادی سروے کے مطابق کوئی معاشی ہدف حاصل نہیں ہو سکا۔جبکہ ترقی کی شرح بھی 3.3فیصد تک گر گئی ہے ۔ پاکستان وسائل کی دولت سے مالامال ملک ہے مگر حکمران ان وسائل کو بروئے کار لانے کی بجائے سارازورقرضے لینے پر لگارہے ہیں۔حکومتی نااہلی کے باعث ملکی معیشت بڑھوتری کی بجائے تنزلی کاشکارہے۔کسادبازاری عروج پر ہے۔سودی معاشی نظام نے ملک و قوم کوتباہی کے دھانے پر پہنچادیا ہے۔جب تک اسلامی طرزمعیشت کو اختیار نہیں کرلیتے ہمارے مسائل حل نہیں ہوسکتے۔انہوں نے کہاکہ حکمران عوام کو ریلیف فراہم کرنے میں بری طرح ناکام ثابت ہوئے ہیں۔غریب عوام کو ریلیف دینے کی بجائے ان پر مزید ٹیکس لگاکرظلم کیاجارہاہے ۔یوں محسوس ہوتاہے کہ جیسے حکمرانوں کو عوامی مسائل اور ان کے حل سے کوئی غرض نہیں۔

مہنگائی میں ہو شر با اضافہ ہوچکا ہے جبکہ پرائس کنٹرول کمیٹیاں قیمتوں پر قابوپانے میں بری طرح ناکام ہوچکی ہیں۔امیر العظیم نے کہا کہ پاکستان مسائل کی آماجگاہ بن گیا ہے۔ملک کی صرف5فیصد اشرافیہ وسائل پر قابض ہے اور باقی 95فیصدعوام کسمپرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں،ان کا کوئی پرسان حال نہیں۔انہوں نے مزیدکہاکہ پی ٹی آئی کی ناقص پالیسیوں کی بدولت عوام میں مایوسی پھیل رہی ہے۔بے روزگاری کے باعث اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوان ہاتھوں میں ڈگریاں لیے دردرکی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں۔اقرباءپروری اور سفارشی کلچر نے میرٹ پر پورااترنے والے افراد کی صلاحیتوں کو زنگ آلود کردیا ہے۔نوجوانوں کے لیے آگے بڑھنے کے مواقع ناپید ہوچکے ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1