گلگت چترال ایکسپریس وے سے سیاحت پروان چڑھے گی،حافظ حفیظ الرحمن

گلگت چترال ایکسپریس وے سے سیاحت پروان چڑھے گی،حافظ حفیظ الرحمن

  

گلگت (اے پی پی)وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ گلگت چترال ایکسپریس وے علاقے کے لیے انتہائی اہمیت کا حامل منصوبہ ہے جو شاہراہ قراقرم کا متبادل ثابت ہوگا، اس منصوبے کی تعمیر سے گلگت بلتستان میں تعمیر و ترقی اور سیاحت کے فروغ میں نئے باب کا آغاز ہوگا،قومی اقتصادی کونسل کے اجلاس میں اس منصوبے کی تعمیر کے حوالے سے وزیر اعظم سے بات کی تھی جس میں انہوں نے یقین دہانی کروائی تھی کہ سابق دور حکومت کے اس منصوبے پر کام شروع کرایا جائے گا، گلگت چترال ایکسپریس وے کے گلگت شندور کے حصے کا سروے اور ضروری مقامات پر ری الائمنٹ کی جانی چاہیے تاکہ یہ منصوبہ ہر لحاظ سے بین الاقوامی سطح کا ہو۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے ممبر پلاننگ این ایچ اے عاصم امین کی جانب سے گلگت چترال ایکسپریس وے کی فزیبلٹی کے حوالے سے دی جانے والی بریفنگ کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ تعمیر و ترقی اور معاشی سرگرمیوں سے امن وامان کو فروغ دینے میں مدد ملی ہے،تعمیر و ترقی کے اس سفر کو آگے بڑھانا ہے۔وزیر اعلیٰ نے ڈپٹی کمشنر گلگت، ڈپٹی کمشنر غذر اور دیگر متعلقہ افسران کو ہدایت کی کہ گلگت تا شندور ایکسپریس وے کی فزیبلٹی اور تعمیر کے حوالے سے این ایچ اے کے ساتھ مکمل تعاون کیا جائے۔حفیظ الرحمن نے کہا کہ شاہراہ قراقرم پر سائن بورڈز کی تنصیب اور سروس لائن نہ ہونے کی وجہ سے ٹریفک حادثات رونما ہوتے ہیں اور قیمتی جانوں کا نقصان ہوتا ہے لہٰذا این ایچ اے شاہراہ قراقرم پر سائن بورڈز کی تنصیب اور آبادی والے علاقوں میں سروس لائن کی تعمیر کیلئے اقدامات کرے۔حافظ حفیظ الرحمن نے ممبر پلاننگ این ایچ اے سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ لوگوں کو شاہراہ قراقرم کے زمینوں کے معاوضوں کی ادائیگی میں تاخیر ہوئی ہے،اپر ہنزہ میں چند لوگوں کو معاوضے ادا کیے گئے ہیں لیکن ابھی بھی بڑی تعداد ان سے محروم ہے، لہٰذا جن لوگوں کی زمین شاہراہ قراقرم کے تعمیر کیلئے استعمال کی گئی ہے۔

ان کو معاوضوں کی ادائیگی جلد از جلد یقینی بنائی جائے۔سفری مشکلات کو مد نظر رکھتے ہوئے ایکسپریس وے طرز منصوبے کا آغاز کیااور وسائل فراہم کئے اس منصوبے کوجلد از جلد مکمل کیا جائے جس کی تعمیر سے گلگت اسلام آباد کا سفر آٹھ گھنٹے میں طے کیا جاسکے گا،ممبر پلاننگ این ایچ اے نے یقین دہانی کرائی کہ چلاس تا رائیکوٹ روڈ پر دو ہفتے میں کام شروع کیاجائے گا۔ حویلیاں تا تھاکوٹ شاہراہ بین الاقوامی طرز پر تعمیر ہورہی ہے جو آخری مراحل میں ہے جس پر 138 ارب روپے کی لاگت آئی ہے، اس کا افتتاح بہت جلد کیا جائے گا۔

مزید :

کامرس -