عمران خان کی امن مذاکرات پیشکش جنونی مودی سرکار نے ہھر ٹھکرا دی 

عمران خان کی امن مذاکرات پیشکش جنونی مودی سرکار نے ہھر ٹھکرا دی 

نئی دہلی (آن لائن) بھارت نے خطے میں قیام امن اور مسائل کے حل کیلئے بات چیت کی پاکستان کی پیشکش مسترد کردی ہے، بھارتی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ دہشت گردی اور بات چیت اکٹھے نہیں چل سکتے، اگر پاکستان تعلقات بہتر بنانے میں سنجیدہ ہے تو بھارت مخالف عناصر کیخلاف کارروائی کرے۔  نریندر مودی نے ہمیشہ اپنے خطے میں امن اور ترقی کو اولین ترجیح دی ہے۔ بھارت نے پاکستان سے مطالبہ کیا کہ خالصتان عناصر کے خلاف کارروائی کی جائے اور کرتار پور کوریڈور سے متعلقہ کمیٹی میں مخصوص متنازع عناصر کو شامل کرنے سمیت کلیدی مسائل پر وضاحت پیش کی جائے۔  بھارتی اخبار کے مطابق پاکستان کی طرف سے بات چیت کی پیش کش کو بھارت نے مسترد کردیا ہے اور کہا ہے دہشت گردی اور بات چیت اکھٹے نہیں چل سکتے ۔ بھارتی اخبار کے مطابق آپریشن بلواسٹار کی برسی کے موقع پر پاکستان کے ایواکیو ٹرسٹ پراپرٹی بورڈ کے رکن گوپال سنگھ چاولہ کی طرف سے بھارت مخالف نعرے بلند کرنے پر ردعمل دیتے ہوئے وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار کا کہنا تھا کہ ہمارا موقف بہت واضح ہے جس کا پہلے اعادہ کرچکے ہیں کہ پاکستان بھارت مخالف سرگرمیوں میں ملوث عناصرکے خلاف کارروائی کرے۔ بھارتی وزارت خارجہ نے بشکیک میں 13 اور 14 جون کو ہونے والے شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہ اجلاس میں نریندر مودی اور وزیراعظم عمران خان کی ملاقات کے حوالے سے خبروں کی تردید کر دی اور کہا کہ دونوں رہنماؤں کے درمیان ملاقا ت کا کوئی امکان ہے نہ ہی اس حوالے سے کوئی تجویز زیر غور ہے۔

پیشکش مسترد

مزید : صفحہ اول