مقبوضہ کشمیر ،آئے روز نوجوانوں کی شہادتوں کیخلاف تیسرے روز بھی مکمل ہڑتال

مقبوضہ کشمیر ،آئے روز نوجوانوں کی شہادتوں کیخلاف تیسرے روز بھی مکمل ہڑتال

  

سرینگر (کے پی آئی ) جنوبی کشمیرمیں اتوار کو مسلسل تیسرے روز بھی پانچ کشمیری نوجوانوں کی شہادت پر ہڑتال رہی اور احتجاجی مظاہرے کئے گئے،اسلام آبا دمیں ہزاروں لوگو ں نے شہید اقبال کی نمازجنازہ میں شرکت کی ۔اس موقع پر علاقہ آزادی اور جیوے پاکستان کے نعروں سے گونج اٹھا، اسلام آباد©ضلع میں انٹرنیٹ سروس اتوار کو بھی منقطع رہی۔ یہ پانچ نوجوان بھارتی فو ج نے دو دنوں کے آپریشن میں شہید کئے،کے پی آئی کو موصولہ رپورٹوں کے مطابق جنوبی کشمیرکے اکثر علاقوں میں اتوار کو پانچ نوجوانوں کی شہادت پر مسلسل تیسرے روز بھی ہڑتال رہی،علاقے میں تمام کاروباری ادارے اور دیگر سرگرمیاں بندرہیںجبکہ ٹریفک بھی معطل رہی ،گذشتہ روز نوجوان اقبال کی شہادت کے فورا بعد ڈورو اننت ناگ میں آنا فاناً تمام قسم کی سرگرمیاں ٹھپ ہوکر رہ گئیں۔ جونہی اقبال کی ہلاکت کی خبرپھیلی تو دوکانات، تجارتی اور تعلیمی ادارے مکمل طور پر بند ہوگئے۔ جبکہ سڑکوں سے ٹریفک کی نقل و حرکت بھی مسدود ہوکر رہ گئی۔ نوجوانوں کی مختلف ٹولیوں نے سڑکوں پر آکر فورسز کارروائی کے خلاف نعرے بازی کی۔ہزاروں لوگوں نے اقبال کی نماز جنازہ میں شرکت کی اس موقع پر آزادی اور پاکستان کے حق میں نعرے بلند کئے گئے جبکہ بھارت کے خلاف شدید نعرہ بازی کی گئی،علاقے میں اتوار کو بھی انٹرنیٹ سروس معطل رہی، علاوہ ازیں پانزرن پلوامہ جھڑپ کے دوران زخمی فوجی اہلکار زخموں کی تاب نہ لا کر دم توڑ گیا جبکہ مانسبل میں حادثاتی طور پر گولی چلنے سے اہلکار کی موت واقع ہوئی ہے۔پیرا ٹروپر کرم جیت سنگھ جھڑپ کے دوران زخمی ہوا تھا جسے بادامی باغ ہسپتال منتقل کردیا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لا کر چل بسا۔ادھرمانسبل آرمی کیمپ میں اس وقت سنسنی پھیل گئی جب آرمی اہلکار اپنے بندوق کی صفائی کررہا تھا کہ اچانک گولی چل گئی جس کی زد میں اس کا ساتھی آگیا جس کی ہسپتال میں موت واقع ہوگئی۔حوالدار تاران کمار جوکہ 13 آر آر سے منسلک تھا ،ساکن کٹھوعہ جموں اس وقت شدید زخمی ہوگیا جب اس کا ساتھی لال چند اپنی سروس رائفل کی صفائی کررہا تھا کہ اچانک گولی نکل گئی۔حوالدارکو فوری طور بادامی باغ سرینگر 92بیس ہسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑگیا۔

مقبوضہ کشمیر

مزید :

علاقائی -