خیبر پختوخوا میں کمرشل سطح پر گیس چوری کیخلاف بڑا کریک ڈاؤن جاری

خیبر پختوخوا میں کمرشل سطح پر گیس چوری کیخلاف بڑا کریک ڈاؤن جاری

پشاور (پ ر) جنرل منیجرسوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ خیبرپختونخوا ارباب ثاقب اور ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف آئی اے پشاور میاں سعید کی ہدایات پرسوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ کی ٹاسک فورس ٹیم نے خیبر پختونخوا کے مختلف اضلاع میں ضلعی انتظامیہ کے تعاون سے غیر قانونی طور پر سوئی گیس استعمال کرنے والوں کیخلاف بلاامتیاز آپریشن کیا جس میں انڈسٹریل زون، کمرشل اور پرائیویٹ ہاؤسنگ سوسائٹیز کے سوئی گیس کنکشن منقطع کر دئیے گئے۔ ترجمان سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ خیبرپختونخوا نے کہا ہے کہ کرک میں سوئی گیس کے غیر قانونی استعمال کیخلاف آپریشن کے دوران ٹاسک فورس نے ایک پلاسٹر آف پیرس کی فیکٹری، ہوٹلز کے تین کمرشل کنکشنز اور پاور جنریشن یونٹس کے کنکشنز منقطع کر دئیے گئے۔ مقامی پولیس نے پلاسٹر آف پیرس اور کمرشل یونٹس کے مالکان کیخلاف ایف آئی آر درج کرا کے ملزمان ناصر خان، خورشید خٹک اور اشفاق خان کو گرفتاری کرلیا گیا۔ ترجمان نے مزید کہا کہ ٹاسک فورس نے آپریشن کے دوران کرک اور کوہاٹ کے مین پائپ لائن سے 14 غیر قانونی پائپ لائن نیٹ ورکس منقطع کر دئیے۔ انہوں نے کہا کہ ٹیم نے پشاور کے ملحقہ علاقوں پخہ غلام، سربند، متھرہ، سوڑیزئی، تہگال، ریگی، اچر، سفید ڈھیری، بڈھ بیر، بہادر کلے، مروزئی، احمد خیل، چغزمئی اور چارسدہ روڈ کے ملحقہ علاقوں میں آپریشن کے دوران ایک ہزار 150 فٹ غیر قانونی پائپ لائن، 77 غیر قانونی کنکشنز اور 29 ٹمپرڈ میٹرز منقطع کر دئیے گئے جبکہ چارسدہ روڈ پر ایک غیر قانونی مکمل ہاؤسنگ سوسائٹی کا سوئی گیس کنکشن بھی منقطع کرکے ہاؤسنگ سوسائٹی کے مالک کو گرفتار کرلیاگیا۔ انہوں نے کہا کہ ٹاسک فورس نے پشاور میں آپریشن کے دوران دو ہوٹلز کے غیر قانونی کمرشل جبکہ 8 ہاسٹلز کے غیر قانونی کنکشنز منقطع کر دئیے اور ملزمان کیخلاف ایف آئی آر درج کرانے کیلئے متعلقہ تھانوں میں درخواستیں جمع کرا دی گئیں۔ انہوں نے کہا کہ ان آپریشنز کے دوران 37 ملین روپے کی 39ایم ایم سی ایف والیوم کا کھوج لگایا جس کے باعث دیگر صارفین متاثر ہو رہے تھے۔

کریک ڈاؤن

مزید : صفحہ اول