6ہزار روپے کی چوری پر برطانوی فوج کے آفیسر کو کورٹ مارشل کا سامنا

 6ہزار روپے کی چوری پر برطانوی فوج کے آفیسر کو کورٹ مارشل کا سامنا

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانوی رائل ایئرفورس کے ایک آفیسر کو ایسی اشیاءچوری کرنے کے الزام میں کورٹ مارشل کا سامنا کرنا پڑ گیا ہے کہ کوئی سوچ بھی نہیں سکتا۔ میل آن لائن کے مطابق فلائٹ لیفٹیننٹ جورڈن پولونیجو نامی یہ آفیسر افغانستان میں بھی ڈیوٹی سرانجام دے چکا ہے۔ اس پر الزام لگایا گیا کہ اس نے آفیسرز میس سے کچھ مٹھائی اور مشروبات چوری کیے جن کی مجموعی قیمت 35پاﺅنڈ (تقریباً 6ہزار 600روپے) بنتی ہے۔جورڈن کے خلاف کیٹریک گیریڑن میں تحقیقات جاری ہیں جہاں اس نے پہلی سماعت الزام کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس نے مٹھائیاں اور مشروبات چوری نہیں کیے۔ ان تحقیقات میں اگر جورڈن کا جرم ثابت ہو جاتا ہے تونہ صرف اس کی تنزلی ہو جائے گی بلکہ اسے بھاری جرمانہ بھی ادا کرنا پڑے گا۔الزام کے مطابق جورڈن نے آر اے ایف ویڈنگٹن میں پوسٹنگ کے دوران گزشتہ سال جون، جولائی اور اگست کے دوران چاکلیٹ، کرسپس اور دیگر اشیاءآفیسرز میس سے چوری کیں۔

کورٹ مارشل

مزید : علاقائی