سندھ حکومت نے دیت کے33کروڑ ادا رکر کے 37 قیدیوں کو رہا کردیا

  سندھ حکومت نے دیت کے33کروڑ ادا رکر کے 37 قیدیوں کو رہا کردیا

کراچی (صباح نیوز)سندھ حکومت نے متاثرہ اہلخانہ کو دیت، دم اور ارش کی مد میں 33 کروڑ 90 لاکھ روپے ادا کرکے مختلف جیلوں میں جرمانے کی عدم ادائیگی کے باعث قید 37 قیدیوں کو رہا کردیا۔ایک میڈیا رپورٹ رپورٹ کے مطابق جیل حکام نے سندھ حکومت کے مذکورہ اقدام کو مثبت اور متعدد غریب قیدیوں کے اہلخانہ کے لیے مسرت کا باعث قرار دیا۔اس حوالے سے بتایا گیا کہ رہائی پانے والے قیدی اپنی سزائیں مکمل کرچکے تھے تاہم متاثرہ خاندان کو جرمانے کی عدم ادائیگی کے باعث مزید قید کاٹ رہے تھے۔ذرائع نے بتایا کہ سینٹرل جیل کراچی سے 10، ملیر جیل سے 4، حیدرآباد جیل سے 13، لاڑکانہ جیل سے 4 اور سانگڑھ جیل سے ایک قیدی اپنی سزا مکمل کر چکے تھے تاہم جرمانے کی رقم ادا کرنے سے قاصر تھے۔انہوں نے بتایا کہ صوبائی حکومت کی جانب سے جمع کردہ معلومات کے مطابق مذکورہ تمام 37 قیدی غریب خاندانوں سے تعلق رکھتے ہیں جو جرمانے کی رقم ادا نہیں کرسکتے تھے۔ذرائع نے بتایا کہ رہائی نصیب پانے والے تمام قیدیوں کا مجرمانہ ریکارڈ نہیں تھا۔وزیر برائے جیل خانہ جات سید ناصر حسین شاہ نے بتایا کہ موجودہ صورتحال سندھ حکومت کی مداخلت کی متقاضی تھی۔انہوں نے کہا کہ ہم نے یہ اقدام اس لیے اٹھایا کہ عدالت کی جانب سے عائد قیدیوں پر جرمانے کی رقم کوئی انفرادی شخص ادا نہیں کرسکتا۔صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ جرمانے کی رقم بہت بڑی تھی اور تمام قیدی غریب خاندانوں سے تعلق رکھتے ہیں جن کی کوئی مجرمانہ سرگرمیاں بھی نہیں تھیں۔ہائی کورٹ کے وکیل حیدر علی حیدر نے صوبائی حکومت کے اس اقدام کو سراہاتے ہوئے کہا کہ ایسے اقدامات ملک کو فلاحی ریاست کے سانچے میں ڈھالتے ہیں۔

قیدی رہا 

مزید : علاقائی