فوج اپنے اخراجات کم کرسکتی ہے تو سول ادارے کیوں نہیں؟ وزیراعظم عمران خان نے شاندار احکامات جاری کردیئے

فوج اپنے اخراجات کم کرسکتی ہے تو سول ادارے کیوں نہیں؟ وزیراعظم عمران خان نے ...
فوج اپنے اخراجات کم کرسکتی ہے تو سول ادارے کیوں نہیں؟ وزیراعظم عمران خان نے شاندار احکامات جاری کردیئے

  


اسلام آباد(ویب ڈیسک)  وزیر اعظم عمران خان نے سول اداروں کے اخراجات کم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر فوج اپنے اخراجات کم کرسکتی ہے تو سول ادارے کیوں نہیں کرسکتے؟اخراجات میں کٹوتی کی  تصدیق مشیر اطلاعات نے بھی کردی۔

وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت آئندہ مالی سال کے بجٹ کی تیاری کے حوالے سے اسلام آباد میں اجلاس منعقد ہوا جس میں مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ، مشیر تجارت عبدالرزاق داوٴد، وزیر مملکت برائے محصولات حماد اظہر، گورنر اسٹیٹ بینک ڈاکٹر رضا باقر، چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی اور دیگر متعلقہ حکام شریک ہوئے۔اجلاس میں مالی سال 2019-20ء کی بجٹ تجاویز زیر غور آئیں ذرائع کے مطابق اجلاس میں وزیر اعظم نے بجٹ میں سول اخراجات میں بھاری کٹوتی کی ہدایت کردی۔ذرائع کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ تمام سول ادارے اپنے اخراجات کم کریں اگر فوج اپنے اخراجات کم کرسکتی ہے تو سول ادارے کیوں نہیں؟

اجلاس کے بعدمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے بتایاکہ  وفاقی حکومت 11 جون کو بجٹ پیش کرے گی۔ بجٹ سےمتعلق غلط خبریں پھیلائی جارہی ہیں، بجٹ کے حوالے سے حکومت نے ترجیحات طے کی ہیں، آئندہ مالی سال کا بجٹ ملکی ضروریات کو مد نظر رکھتے ہوئے پیش کیا جارہا ہے،ہماری ترجیح ہے کہ بجٹ کوعوام دوست بنایا جائے۔ یہ بجٹ طویل مدتی اہداف کو مد نظر رکھتے ہوئے پیش ہو گا۔ وزیراعظم نے اس بجٹ کا کئی مرتبہ جائزہ لیا ہے۔ وزیراعظم جلد عوام کو بجٹ سے متعلق اعتماد میں لیں گے۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ اس بجٹ میں ہر حکومتی محکمے اور ادارے کے اخراجات میں کٹوتی ہو گی، اس کا آغاز افواج پاکستان نے کیا، آرمی چیف اور افواج پاکستان نے فیصلہ کیا کہ قبائلی علاقوں پر بجٹ خرچ ہو، مسلح افواج کے تمام اعلیٰ افسران نے تنخواہوں اور مراعات میں اضافے سے انکار کیا، پاکستان کے ساتھ کھڑے عام قبائلی کو ترقی میں حصہ دار بنایا جائے گا۔

مزید : قومی