جوڑوں میں طلاقیں کروانے والی وکیل نے طلاق سے بچنے کا طریقہ بتادیا

جوڑوں میں طلاقیں کروانے والی وکیل نے طلاق سے بچنے کا طریقہ بتادیا
جوڑوں میں طلاقیں کروانے والی وکیل نے طلاق سے بچنے کا طریقہ بتادیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کیتھرین تھامس برطانیہ کے طلاق کرانے والے چوٹی کے وکلاءمیں سے ایک ہیں جنہوں نے اپنے تجربے کو بروئے کار لاتے ہوئے لوگوں کو طلاق سے بچنے کے لیے انتہائی مفید مشورہ دے دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق کیتھرین تھامس کا کہنا ہے کہ ”جب میاں بیوی کی جنسی زندگی کم یا ختم ہو کر رہ جائے، ان دونوں کو، یا دونوں میں سے کسی ایک کو اپنے کمائے ہوئے پیسوں پر اختیار نہ رہے اور میاں بیوی ایک دوسرے کی پریشانیوں سے لاتعلق ہو جائیں تو سمجھ لیں کہ ان دونوں کی طلاق ہونے والی ہے۔ یہ ایسی بنیادی غلطیاں ہیں جو لوگوں کی شادی شدہ زندگی کے لیے زہرقاتل ہیں اور طلاق کے امکانات کو کئی گنا بڑھا دیتی ہیں۔“

کیتھرین تھامس کا کہنا تھا کہ ”اگر آپ طلاق سے بچنا چاہتے ہیں تو اپنی جنسی زندگی کو بہرصورت بہتر رکھیں اور جنسی اعتبار سے متحرک رہیں۔ اس کے علاوہ اپنے شوہر یا بیوی کے پیسوں پر انحصار کرنے کی بجائے خود کمانا شروع کریں اور اپنی کچھ ذمہ داری خود اٹھائیں۔ اس طرح آپ کے شریک حیات کو اس کے پیسے پر کنٹرول حاصل ہو جائے گا اور اس کا سب سے بڑا شکوہ جاتا رہے گا۔ پھر آپ اپنے شریک حیات کی پریشانیاں بٹائیں، اس کے پاس بیٹھیں، اس کی بات غور سے سنیں اور اگر اسے کوئی مسئلہ درپیش ہے تو اسے حل کرنے کی اپنی سی کوشش کریں، اور کچھ نہ کر سکیں تو اس کا حوصلہ بڑھائیں۔میاں بیوی کے درمیان گفتگو کا نہ ہونا ازدواجی تعلق کے خاتمے کی چند بڑی وجوہات میں سے ایک ہے۔ روزانہ کچھ وقت ایسا مختص کریں جس میں آپ اپنے شریک حیات کے پاس بیٹھیں اور اس سے باتیں کریں۔ اس دوران ٹی وی مت دیکھیں، موبائل فون مت استعمال کریں، غرض کوئی دوسرا کام مت کریں، صرف اپنے شریک حیات کی باتیں سنیں اور اس کو اپنی باتیں سنائیں۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس