گاﺅں والوں نے ان دونوں مینڈکوں کی شادی کیوں کروادی؟ جان کر آپ کو بھی ہنسی آجائے گی

گاﺅں والوں نے ان دونوں مینڈکوں کی شادی کیوں کروادی؟ جان کر آپ کو بھی ہنسی ...
گاﺅں والوں نے ان دونوں مینڈکوں کی شادی کیوں کروادی؟ جان کر آپ کو بھی ہنسی آجائے گی

  

دبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) توہم پرستی تو ہمارے ہاں بھی بہت پائی جاتی ہے لیکن بھارت میں تو اس کے ایسے مظاہر دیکھنے کو ملتے ہیں کہ آدمی کی حیرت گم ہو جائے۔ اب بھارت ریاست کرناٹک کے اس گاﺅں کو ہی دیکھ لیں جہاں بارش کے دیوتا کو خوش کرنے کے لیے لوگوں نے دو مینڈکوں کی ہی شادی کروا دی۔ این ڈی ٹی وی کے مطابق یہ عجیب و غریب شادی کرناٹک کے علاقے اوداپئی میں کروائی گئی اور یہ صرف اس سال ہی نہیں، بلکہ ہر سال کروائی جاتی ہے۔

رپورٹ کے مطابق اس علاقے کے لوگ مینڈکوں کی شادی کی اس روایت کو ’مینڈوکا پرینایا‘ کہتے ہیں اور ان کا خیال ہے کہ اس سے بارش کا دیوتا خوش ہوتا ہے اور زیادہ بارشیں دیتا ہے۔ مینڈکوں کی شادیاں کرناٹک کے اس علاقے تک ہی محدود نہیں بلکہ پورے کرناٹک اور دیگر ریاستوں کے بعض علاقوں میں بھی ہر سال کروائی جاتی ہیں۔ لوگ دو مختلف دیہات سے نر اور مادہ مینڈک پکڑتے ہیں اور پھر سینکڑوں لوگوں پر مشتمل شادی کی تقریب کا انعقاد کیا جاتا ہے جس میں نرمینڈک کو دولہے اور مادہ مینڈک کو دلہن کی طرح سجایا جاتا ہے اور کپڑے پہنائے جاتے ہیں اور پھر ان کی انسانوں کی طرح شادی کروا دی جاتی ہے۔ بعض دیہات میں تو شادی کے بعد ان مینڈکوں کو ہنی مون کے لیے دور دراز کے علاقوں میں لیجایا جاتا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /عرب دنیا