لوگوں سے انوکھے طریقے سے مانگ مانگ کر 75 لاکھ روپے جمع کرنے والی خاتون

لوگوں سے انوکھے طریقے سے مانگ مانگ کر 75 لاکھ روپے جمع کرنے والی خاتون
لوگوں سے انوکھے طریقے سے مانگ مانگ کر 75 لاکھ روپے جمع کرنے والی خاتون

  

دبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) سڑکوں پر بچے دکھا کر بھیک مانگنے والی خواتین تو آپ نے دیکھ رکھی ہوں گی لیکن آپ کو یہ سن کر حیرت ہو گی کہ اب یہ کام انٹرنیٹ پر بھی شروع ہو گیا ہے۔ گلف نیوز کے مطابق گزشتہ روز دبئی پولیس نے ایک ایسی خاتون بھکاری کو گرفتار کیا ہے جو فیس بک، ٹوئٹر اور دیگر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر لوگوں کو اپنے معصوم بچوں کی تصاویر دکھا کر بھیک مانگتی تھی۔ اس انوکھے طریقے سے بھیک مانگ مانگ کر اب تک اس خاتون نے ایک لاکھ 83 ہزار درہم (تقریباً 75 لاکھ روپے) جمع کر لیے تھے۔

رپورٹ کے مطابق اس خاتون کی بھیک کے لیے کی گئی درخواست اس کے سابق شوہر نے بھی سوشل میڈیا پر دیکھ لی اور پولیس کو اطلاع دے دی، اس شخص نے پولیس کو بتایا کہ اس کی سابق بیوی جھوٹ بول کر لوگوں سے پیسے مانگ رہی ہے۔ وہ کوئی غریب نہیں ہے۔ وہ لوگوں کو بے وقوف بنا رہی ہے۔ وہ جن بچوں کی تصاویر لوگوں کو دکھاتی ہے، وہ بچے بھی اس کے نہیں ہیں۔“رپورٹ کے مطابق دبئی پولیس نے بھی اس خاتون کی گرفتاری کے بعد اپنے سوشل میڈیا اکاﺅنٹ پر لوگوں کو آن لائن بھیک مانگنے کے اس نئے طریقے سے خبردار رہنے کی ہدایت کی۔

مزید : عرب دنیا