حامد میر نے حکومت کو درپیش حقیقی خطرے کی نشاندہی کردی

حامد میر نے حکومت کو درپیش حقیقی خطرے کی نشاندہی کردی
حامد میر نے حکومت کو درپیش حقیقی خطرے کی نشاندہی کردی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)تجزیہ کار حامد میر نے کہاہے کہ مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی اس پوزیشن میں نہیں ہیں کہ حکومت کیخلاف کوئی تحریک چلاسکیں لیکن مولانا فضل الرحمان اگر اسلام آباد کی طرف آگئے تو پھر پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن ان کے ساتھ ملیں گی ، اس لئے حکومت کیلئے نہ ن لیگ خطرہ ہے اور نہ پیپلز پارٹی لیکن مولانا فضل الرحمان خطرہ ہیں۔

جیونیوز کے پروگرام ”آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے حامد میر نے کہا کہ وزیر اعظم اور وزراءکہہ چکے ہیں کہ اپوزیشن نے احتجاج کرناہے تو شوق سے کرے ، این آر او توکسی کو نہیں ملا ، اب وزیر اعظم جب خود کہہ چکے ہیں کہ احتجاج شوق سے کریں تو اب آصف زرداری کی گرفتار ی پر جو تھوڑا بہت احتجاج ہوا ہے تو پھر کچھ لوگوں کے ہاتھ پاﺅ ں کیوں پھول گئے ہیں؟

انہوں نے کہا کہ آصف زرداری کی گرفتاری کوئی بہت اہم نہیں ہے اور آنیوالے دنوں میں مسلم لیگ ن کی بھی کوئی شخصیت گرفتار ہوجائے تو پھر بھی کوئی فرق نہیں پڑے گا کیونکہ مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی اس پوزیشن میں نہیں ہیں کہ حکومت کیخلاف کوئی تحریک چلاسکیں لیکن مولانا فضل الرحمان اگر اسلام آباد کی طرف آگئے تو پھر پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن ان کے ساتھ ملیں گی ، اس لئے حکومت کیلئے نہ ن لیگ خطرہ ہے اور نہ پیپلز پارٹی لیکن مولانا فضل الرحمان خطرہ ہیں۔

مزید :

قومی -